بچے نے نو فٹ لمبے مگرمچھ کو مار بھگایا

Image caption ڈاکٹرز کے مطابق جیمز بارنی کو زیادہ گہرے زخم نہیں آئے ہیں

امریکی ریاست فلوریڈا میں ایک نو سالہ بچے نے نہ صرف نو فٹ لمبے مگرمچھ سے جان بچائی بلکہ اسے مار بھگایا۔

جیمز بارنی اس لڑائی میں زخمی بھی ہو گئے اور اب آرنلڈ پلمر ہسپتال میں زیرعلاج ہیں۔

انھوں نے اس واقعے کے تفصیل بتاتے ہوئے کہا وہ اپنے دوستوں کے ساتھ سائیکل چلا رہے تھے کہ اس دوران انھوں نے جھیل میں نہانے کا فیصلہ کیا۔

بارنی سینٹ کلاؤڈ کی ٹوہو جھیل میں نہا رہے تھے کہ اس دوران انھیں لگا کہ ان کے ساتھ کوئی کھیل رہا ہے اور پھر انھیں کچھ سمجھ نہیں آیا کہ کیا ہوا۔

بارنی کے مطابق انھوں نے پانی میں ہاتھ ڈالا اس چیز کو پکڑنے کی کوشش کی تو ایک مگرمچھ کے جبڑے اور دانتوں پر ہاتھ لگا۔

’اس موقعے پر مجھے کچھ سمجھ نہیں آیا کہ کیا کرنا چاہیے لیکن فوراً سنبھل کر مگرمچھ کو مارنا شروع کر دیا۔ اور اس دوران میں تھوڑی ہمت کر کے مگرمچھ کا جبڑا تھوڑا سا کھولا اور بچ نکلنے میں کامیاب ہو گیا۔‘

جیمز بارنی کا علاج کرنے والے ڈاکٹر کے مطابق بارنی کو دانتوں اور پنجوں کے 30 زخم آئے ہیں اور مگرمچھ کا ایک دانت ان کی جلد میں رہ گیا تھا۔

بارنی اس دانت کو اپنے پاس رکھنا چاہتے تھے لیکن حکام اس کو اپنے ساتھ لے گئے تاکہ مگرمچھ کا سراغ لگانے میں مدد مل سکے۔

حکام کے اندازے کے مطابق مگرمچھ کی لمبائی نو فٹ اور وزن 226 کلوگرام کے قریب ہے۔

اس مگرمچھ کو تلاش کر کے پکڑنے کی کوششیں جاری ہیں۔

اسی بارے میں