شہزادی کیٹ مڈلٹن پھر امید سے ہیں

Image caption ۔۔ ڈچس آف کیمبرج شہزادی کیٹ مڈلٹن پھر امید سے ہیں

برطانیہ کے شاہی خاندان نے اعلان کیا ہے کہ ڈچس آف کیمبرج شہزادی کیٹ مڈلٹن ایک بار پھر امید سے ہیں۔ کینسنگٹن پیلِس کا کہنا ہے کہ شہزادی مڈلٹن اور شاہی خاندان کے تمام افراد اس خبر سے بہت خوش ہیں۔

کینسنگٹن پیلِس کے مطابق شہزادی کیٹ مڈلٹن کو اپنے پہلے حمل کی طرح اس بار بھی طبیعت کی ناسازی کی بنا پر محل کے اندر ہی طبی امداد مل رہی ہے۔

برطانوی وزیر اعظم ڈیوڈ کیمرون نے ٹویٹ کے ذریعے اپنی خوشی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اُنھیں ’دوسرے بچے کی خبر سن کر بہت خوشی ہوئی ہے۔‘

شاہی خاندان میں پیدا ہونے والا یہ بچہ یا بچی برطانوی بادشاہت کے چوتھے درجے پر ہوگا، جس سے شہزادہ ہیری مزید نیچے آ گئے ہیں۔

شہزادہ چارلز کی سرکاری رہائش گاہ کلیرنس ہاؤس کے مطابق شہزادی کیٹ مڈلٹن طبیعت کی ناسازی کی وجہ سے اپنے شوہر شہزادہ ولیم کے ساتھ آکسفرڈ میں ایک سرکاری دورے پر نہیں جا سکیں گی۔

شہزادی کیٹ نے ولیم کے ساتھ چین کے ایک مطالعاتی مرکز کے افتتاح پر جانا تھا۔ یہ مرکز 20 لاکھ پاؤنڈ کی لاگت سے تعمیر کیا گیا ہے۔

شہزادی مڈلٹن کو ایک ایسا مرض لاحق ہے جس میں مریضہ کو حمل کے دوران اضافی پانی، ادویات اور غذائی اجزا کی ضرورت ہو سکتی ہے۔

اس سے قبل اس ماہ شہزادی نے اپنے پہلے بیرونی دورے پر مالٹا جانا تھا۔

ان کے دوسرے حمل کا یہ اعلان ان کے پہلے بچے شہزادہ جارج کی پہلی سالگرہ کے دو ماہ کے بعد آیا ہے۔

بی بی سی کے شاہی نامہ نگار پیٹر ہنٹ کا کہنا ہے کہ دوسرے حمل کی خبر سے خاصی دلچسپی پیدا ہو گی، تاہم پرنس جارج کی پیدائش کی آئینی اہمیت نہیں ہے، کیونکہ اس بچے یا بچی کے بادشاہ یا ملکہ بننے کا امکان کم ہے۔

شہزادی کیٹ مڈلٹن کے پہلے حمل کا اعلان دسمبر 2012 میں کیا گیا تھا۔