ایئرفورس نے عجائب گھر سے پرزے حاصل کیے

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption کینیڈا میں یہ امدادی جہاز ہر سال ہزاروں ہنگامی حالات سے نمٹنے کے لیے استعمال ہوتے ہیں

کینیڈا کی ایئرفورس نے اپنے امدادی جہازوں کو پرواز کے قابل رکھنے کے لیے عجائب گھر سے اضافی پرزے حاصل کیے۔

اطلاعات کے مطابق 2012 میں رائل کینیڈین ایئرفورس کا تکنیکی عملہ صوبہ اونٹاریو کے شہر ٹرینٹن میں واقع فوجی عجائب گھر میں اضافی پرزے حاصل کرنے کے لیے گیا۔

فضائیہ کو عجائب گھر میں موجود جہاز سے نیویگیشن کے آلات حاصل کرنا تھے کیونکہ اسی نوعیت کے پرزے جہازوں میں استعمال ہو رہے ہیں۔

اخبار آٹووا سٹیزن کے مطابق عملے نے عجائب گھر میں نمائش کے لیے رکھے گئے ہرکولیس سی 130 سے نیویگیشن کے پرزے حاصل کیے اور اس مقصد کے لیے پہلے عجائب گھر سے اجازت لی گئی۔

عجائب گھر کے اہلکار کیون ونڈسر کے مطابق: ’انھوں نے فون کیا اور کہا، ہمارے پاس دو آئی این ایسز یعنی inertial navigation units تھے جو خراب ہو گئے ہیں، کیا آپ کے پاس ہیں؟‘

کیون کے مطابق وہ خوش قسمت تھے کہ ہمارے پاس آلات موجود تھے اور یہ تبدیلی کے قابل تھے اور ہمیں انھیں الگ کرنے میں نصف گھنٹہ لگا۔

فوجی سازو سامان کی خریداری کے سابق سربراہ ڈین روس کے مطابق یہ باعث شرمندگی ہے کہ ایئرفورس کو اپنے 12 جہازوں کو قابل استعمال رکھنے کے لیے عجائب گھر میں موجود پرانے آلات استعمال کرنا پڑے۔

سٹیزن کے مطابق یہ امدادی جہاز ہر سال ہزاروں ہنگامی حالات سے نمٹنے کے لیے استعمال ہوتے ہیں۔ حکومت 2002 سے ان جہازوں کو تبدیل کرنے کے وعدے کر رہی ہے لیکن اس بات کو یقینی بنانے کے لیے کہ جہازوں کی خریداری صحیح ہو، ابھی تک ان وعدوں پر عمل نہیں ہو سکا۔

اسی بارے میں