دس چیزیں جن سے ہم لاعلم تھے

امریکہ کی خفیہ ایجنسی سی آئی اے کے ہیڈ کوارٹر میں واقع کافی شاپ سٹار بکس کے ملازمین کو کپ پرگاہک کا نام تحریر کرنے کی اجازت نہیں ہے۔

مزید جاننے کے لیے کلک کریں

یکم ستمبر کے آتے ہی چاہیے موسم کیسا بھی ہو جاپانی کھلی جگہوں پر تیراکی کرنا ترک کر دیتے ہیں۔

مزید جاننے کے لیے کلک کریں

چاکلیٹ کھانے کا ایک صحیح طریقہ بھی موجود ہے۔ وہ یہ کہ چاکلیٹ کا ٹکڑا منھ میں رکھیں اور اس کو زبان اور تالوں کے بیچ میں پگھلنے دیں، اس کے بعد منھ سے سانس لیں اور ناک سے نکالیں۔

مزید جاننے کے لیے کلک کریں

برطانیہ میں ایکس فیکٹر کی جج شیرل کول کو انٹرنیٹ پر تلاش کرنے کے نتائج میں زیادہ تر ویب سائٹس وائرس سے متاثرہ ہوتی ہیں۔

مزید جاننے کے لیے کلک کریں

لنگور پتوں سے اسفنج تیار کرتے ہیں اور ان کی مدد سے پانی پیتے ہیں۔

مزید جاننے کے لیے کلک کریں

سال 1932 میں جب بحری جہاز آر ایم ایس کوئین میری کا افتتاح ہوا تو آسٹریلین وائن کی ایک بوتل اس کے پیٹے پر توڑی گئی۔

مزید جاننے کے لیے کلک کریں

شراب نوشی کرنے والے مردوں میں دوسروں کی مسکراہٹ کا مسکرا کا جواب دینے کی زیادہ عادت ہوتی ہے لیکن خواتین میں ایسا نہیں ہے۔

مزید جاننے کے لیے کلک کریں

امریکہ میں کینسر کے پرانے ہسپتال فرانس کے قلعوں کی طرز پر تعمیر کیے جاتے تھے اور ان میں شیمپین بھی فراہم کی جاتی تھی۔

مزید جاننے کے لیے کلک کریں

سمندر میں سب سے زیادہ خوفناک شکاری شارک کی انفرادی شخصیت ہوتی ہے جو ان کے گھل ملنے کی عادات پر اثر انداز ہوتی ہے۔

مزید جاننے کے لیے کلک کریں

ریستوران میں رات کے کھانے میں جن گاہکوں کے ٹیبل کھڑکی کے ساتھ ہوتے ہیں وہ سلاد کا زیادہ آڈر دیتے ہیں جبکہ تاریک حصوں میں بیٹھنے والے گاہک پیڈنگ یا میٹھے کا زیادہ آڈر دیتے ہیں۔

مزید جاننے کے لیے کلک کریں

اسی بارے میں