’سعودی اساتذہ کے لیے بی ایم ڈبلیو کاروں کا انعام‘

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption سعودی وزارت تعلیم نے اعلٰی کارکردگی دکھانے والے اساتذہ کے لیے بی ایم ڈبلیو سمیت مہنگی کاریں اور کیش بطرو انعام دینے کا اعلان کیا ہے

سعودی وزارت تعلیم نے اعلٰی کا کارکردگی دکھانے والے اساتذہ کے لیے بی ایم ڈبلیو سمیت مہنگی کاریں اور کیش بطور انعام دینے کا اعلان کیا ہے۔

سعودی روزنامے ’دی عرب نیوز پیپر‘ کے مطابق اچھی کارکردگی دکھانے پر طا لب علم بھی انعامات کے حقدار ہوں گے، لیکن یہ انعامات ان کے اساتذہ سے کم ہوں گے، جو کہ بہتر کارکردگی دکھانے پر ، پندرہ سو اور بییس ہزار پاؤنڈز کے درمیان انعام حاصل کر سکیں گے۔

وزارت تعلیم کا کہنا ہے کہ ان اقدامات کا مقصد، ٹیچنگ کے شعبے کا معیار اور بلند کرنا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ رواں سال یہ انعامات جیتنے والے اساتذہ کے ناموں کو حتمی شکل دے دی گئی ہے۔

وزارت تعلیم کے ذرائع نے میڈیا کو بتایا کہ ’بی ایم ڈبلیوگاڑیاں اور کیش انعامات اساتذہ کی کارکردگی بہتر بنانے میں مددگار ثابت ہوں گے۔‘

اس بارے میں سوشل میڈیا پر ملے جلے ردعمل کا اظہار کیا گیا۔ کچھ نے اسے محنتی لوگوں کو ٹیچنگ کے شعبے کی طرف راغب کرنے کا بروقت اقدام قرار دیا تو بعض نےسعودی وزارت تعلیم کو انعامات کی بجائے تعلیم کے شعبے میں مزید پیسے لگا کر اساتذہ کو خوش کرنے کی تلقین کی گئی۔

اور ایک دلچسپ تبصرہ تو یہ بھی تھا کہ ’اگر تنگ نظر سعودی معاشرے کی خواتین اساتذہ بی ایم ڈبلیو گاڑی کا انعام حاصل کر لیں تو وہ اس کا کیا کریں گی، کیونکہ خواتین کو تو سعودی عرب میں گاڑی چلانے کی اجازت ہی نہیں۔‘