’بدعنوان عناصر کو پناہ نہ دینے پر اتفاق‘

تصویر کے کاپی رائٹ EPA
Image caption امید کی جا رہی ہے کہ ایپک کے رہنما آیندہ ہفتے بیجنگ میں ہونے والے سربراہی اجلاس میں اس تجویز کی حمایت کریں گے

ایشیا پیسیفک اکنامک کارپوریشن (ایپک) سے تعلق رکھنے والے ممالک نے چین کی قیادت میں بدعنوانی کے بارے میں معلومات کا تبادلہ کرنے کے لیے ایک نیٹ ورک بنانے پر رضامندی ظاہر کی ہے۔

ایپک ارکان نے ایک بیان میں کہا ہے کہ چین کی جانب سے دی جانے والی اس تجویز کا مقصد بدعنوانی میں ملوث افراد کو محفوظ پناہ گاہیں فراہم کرنے سے انکار کرنا ہے۔

بدعنوان اہلکاروں کے خلاف نیٹ ورک بنانے کی کوششوں کا سہرا چین کے صدر شی جن پنگ کو جاتا ہے۔

اس نیٹ ورک میں ایسے بدعنوان اہلکاروں کے خلاف بھی کارروائی کی جا سکے گی جو بیرونِ ملک بھاگ جاتے ہیں۔

امید کی جا رہی ہے کہ ایپک کے رہنما آئندہ ہفتے بیجنگ میں ہونے والے سربراہی اجلاس میں اس تجویز کی حمایت کریں گے۔

امریکی وزیرِ خارجہ جان کیری نے اس تجویز کو خوش آئند قرار دیتے ہوئے اسے ’بدعنوانی کے خلاف اہم قدم قرار‘ دیا ہے۔

جان کیری نے صحافیوں کو بتایا کہ بدعنوانی نہ صرف کھیل کے غیر منصفانہ میدان پیدا کرتی ہے بلکہ یہ اقتصادی تعلقات کو بھی بگاڑ دیتی ہے۔

انھوں نے کہا کہ بدعنوانی تمام ممالک کے عوام کا اعتبار چرا لیتی ہے اور انھیں اس بات کا یقین ہو جاتا ہے کہ یہ سسٹم ہر کسی کے لیے کام کر سکتا ہے۔

ایپک گروپ نے ایک بیان میں کہا ہے کہ انھوں نے اینٹی کرپشن اتھاریٹیز اینڈ لا انفورسمینٹ ایجنسیز کے نام سے ایک نیٹ ورک قائم کیا ہے۔

بیان کے مطابق یہ نیٹ ورک اس کے 21 ارکان کو بدعنوانی میں ملوث افراد کو محفوظ پناہ گاہیں فراہم کرنے سے انکار کرتا ہے جس میں کسی مجرم کو اس کے ملک کی تحویل میں دینا، باہمی قانونی امداد اور بحالی بھی شامل ہیں۔

تاہم نامہ نگاروں کا کہنا ہے کہ یہ واضح نہیں کہ یہ معاہدہ ان ممالک کے درمیان کس طرح کام کرے گا جس کے درمیان مجرموں کے تبادلے کا معاہدہ موجود نہیں ہے۔

اگرچہ امریکہ، کینیڈا اور آسٹریلیا کا چین کے تارکِ وطن کے ساتھ دوستانہ تعلقات ہیں تاہم ان ممالک کا چین کے ساتھ مجرموں کے تبادلے کا کوئی معاہدہ موجود نہیں ہے۔

خیال رہے کہ چین کی حکومت معاشرے میں بڑے پیمانے پر پائی جانے والی بد عنوانی کے خاتمے کے لیے کوشاں ہے۔

چین میں رواں سال کے پہلے نو ماہ کے دوران 13,000 سے زائد اہلکار بد عنوانی میں ملوث پائے گئے۔

اسی بارے میں