عراق: بیجی سے دولتِ اسلامیہ کے شدت پسند پسپا

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption دولتِ اسلامیہ نے عراق کے تیل صاف کرنے والے والے سب سے بڑے کارخانے بیجی پر جون میں قبضہ کر لیا تھا

عراق میں حکام کا کہنا ہے کہ ان کی افواج نے دارالحکومت بغداد کے شمال میں واقع شہر بیجی سے دولتِ اسلامیہ کے شدت پسندوں کو پسپا کر دیا ہے۔

عراقی جنرل عبدالوہاب نے سرکاری ٹی وی کو بتایا کہ ’قصبے کو مکمل طور پر آزاد کروا لیا گیا ہے۔‘

ادھر تیل صاف کرنے کے سب سے بڑے کارخانے بیجی سے شدید لڑائی کی اطلاعات موصول ہو رہی ہیں۔

دولتِ اسلامیہ نے عراق کے تیل صاف کرنے والے والے سب سے بڑے کارخانے بیجی پر جون میں قبضہ کر لیا تھا۔

عراقی افواج نے منگل کو ملک کے تیل صاف کرنے کے سب سے بڑے کارخانے بیجی کے زیادہ تر حصے پر دوبارہ قبضہ کر لیا تھا تاہم انھوں نے اپنی پیش قدمی کو روک دیا تھا۔

عراقی فوج کے کپتان نے برطانوی خبر رساں ادارے روئٹرز کو بتایا کہ جنگی طیاروں نے دولتِ اسلامیہ کے بھاگتے ہوئے شدت پسندوں پر بمباری کی۔

دوسری اطلاعات کے مطابق عراقی افواج نے تیل کے کارخانے بیجی کا محاصرہ کر لیا ہے۔

عراقی حکام نے خبر رساں ادارے اے پی کو بتایا کہ عراقی فوج نے آپریشن کے دوران مقامی شہریوں کو متنبہ کیا کہ وہ گھروں سے باہر نہ نکلیں۔

دولت اسلامیہ نے شام اور عراق کے وسیع علاقوں پر قبضہ کر رکھا ہے۔

امریکہ اور اس کے اتحادی عراقی اور کرد افواج کی مدد کے لیے دولت اسلامیہ کے خلاف فضائی کارروائی میں مصروف ہیں اور گذشتہ دو مہینوں میں دولت اسلامیہ کے ٹھکانوں پر سینکڑوں فضائی حملے کیے جا چکے ہیں۔

اسی بارے میں