بوب مارلے کی یاد میں گانجے کا عالمی برانڈ

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption مارلے گانجے کے قانونی طور پر استعمال کی اجازت دیے جانے کے بڑے حامی تھے

جمیکا سے تعلق رکھنے والے ریگے فنکار بوب مارلے کے خاندان نے بقول ان کے دنیا میں گانجے سے بنی اشیا کا پہلا عالمی برانڈ متعارف کروایا ہے۔

’مارلے نیچرل‘ نامی اس برانڈ کے تحت گانجا ملے لوشن، کریمیں اور دیگر اشیا تیار کی جائیں گی۔

یہ اشیا آئندہ برس سے امریکہ اور ممکنہ طور پر دنیا بھر میں فروخت کے لیے پیش کی جائیں گی۔

بوب مارلے کی بیٹی سیڈیلا مارلے نے کہا ہے کہ ان کے والد اگر زندہ ہوتے تو یقیناً اس اقدام کی حوصلہ افزائی کرتے۔

انھوں نے کہا کہ ’میرے والد لوگوں کو اس بوٹی کی شفا بخشنے کی صلاحیت کو سمجھتا دیکھ کر بہت خوش ہوتے۔‘

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption مارلے کے اہلِ خانہ کے مطابق اگر وہ زندہ ہوتے تو اس کوشش سے بہت خوش ہوتے

1981 میں کینسر میں مبتلا ہوکر انتقال کرنے والے بوب مارلے نےگانجے کو اپنے عقیدے ’رستافاری‘ کے بنیادی جزو کے طور پر اپنایا تھا اور وہ اس کے استعمال کی اجازت کے حوالے سے قانون سازی کے بڑے حامی تھے۔

امریکہ میں اس وقت 20 ریاستیں طبی مقاصد کے لیے گانجے کی فروخت کی منظوری دے چکی ہیں تاہم امریکہ کے وفاقی قانون کے تحت تاحال یہ غیرقانونی ہے۔

اس کے علاوہ ریاست کولوراڈو اور واشنگٹن میں گانجے کو تفریحی مقصد کے لیے بھی فروخت کیا جا سکتا ہے۔

اسی بارے میں