دس چیزیں جن سے ہم گذشتہ ہفتے لا علم تھے

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption یوکرین کے اس علاقے میں سو سال سے بھوری نسل کا کوئی بھالو نہیں دیکھا گیا تھا

1۔ یوکرین میں چیرنوبل کے مقام پر سو سال بعد ایک بھورا بھالو نظر آیا ہے۔

مزید جاننے کے لیے کلک کریں

2۔ بیئر کے کافی سے کم چھلکنے کا امکان ہے جبکہ گینس نامی بیئر کا ایک جگہ سے دوسری جگہ لانا لے جانا سب سے آسان ہے۔

مزید جاننے کے لیے کلک کریں

3۔ شیکسپیئر کے ڈراموں کا پہلا مجموعہ 200 سال تک فرانس کی سینٹ عمر لائبریری میں بغیر شناخت کے پڑا رہا۔ یہ 230 نسخوں میں سے واحد نسخہ ہے جو اب تک بچا ہوا ہے۔

مزید جاننے کے لیے کلک کریں

4۔ ہالی وڈ اداکارہ ٹیلر سوئفٹ کی اداکاری میں بنائی جانے والی اپنی سوانحی فلم کو جونی میشل نے روک دیا۔

مزید جاننے کے لیے کلک کریں

5۔ امریکی ریاست اوریگن میں سبزی خوروں کے لیے کمبھی کا شوربہ تھینکس گیونگ کے کھانوں تلاش میں غیر معمولی طور پر مقبول ہے۔

مزید جاننے کے لیے کلک کریں

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption کافی کے مقابلے بیئر (ایک قسم کا مشروب) کے چھلکنے کا امکان کم ہے

6۔ کتے اپنا سر بائیں یا دائیں اس بنیاد پر کرتے ہیں کہ آیا وہ بات سن رہے ہیں یا پھر اس بات کا لہجہ اور سر۔

مزید جاننے کے لیے کلک کریں

7۔ سرجان گیلگڈ نے ہم جنس پرست فحش فلم کی سکرپٹ لکھی۔

مزید جاننے کے لیے کلک کریں

8۔ سوئٹزرلینڈ کے بعض علاقوں میں روایتی کرسمس کھانوں میں بلی بھی ہوتی ہے۔

مزید جاننے کے لیے کلک کریں

9۔ اعلی عہدیداروں کی آواز میں زیادہ پچ ہونے کا امکان ہے۔

مزید جاننے کے لیے کلک کریں

10۔ ہلیری کلنٹن کی ذاتی پسند میں ڈائٹ ادرک والا مشروب، فرانسیسی سلاد، ہمس (ایک قسم کی چٹنی)، اور کٹے ہوئے پھل شامل ہیں۔

مزید جاننے کے لیے کلک کریں

اسی بارے میں