کمپیوٹر میں خرابی، لندن کی فضائی حدود کی بندش

تصویر کے کاپی رائٹ PA
Image caption ہیمپشر کے کنٹرول سینٹر انگلینڈ اور ویلز کی دو لاکھ مربع میل کی فضائی حدود کو کنٹرول کرتا ہے

برطانیہ میں کمپیوٹرائزڈ نظام میں خرابی کی وجہ سے ایئر ٹریفک کنٹرول مرکز کی بندش سے ہزاروں مسافروں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑا ہے۔

برطانوی ایئر ٹریفک سروسز کا کہنا ہے کہ سوانزک میں واقع مرکز میں فلائٹ ڈیٹا سسٹم میں ایک تکنیکی خرابی اس صورتحال کی وجہ بنی۔

اس خرابی کی وجہ سے جمعے کو لندن کی فضائی حدود کئی گھنٹے تک بند رہی تھی جس کی وجہ سے سینکڑوں پروازیں متاثر ہوئی تھیں۔

حکام کا کہنا ہے کہ اب اس خرابی کو دور کر لیا گیا ہے اور نظام بحال کر دیا گیا ہے۔

برطانوی حکومت نے پروازوں کے نظام میں خلل کو ناقابلِ قبول قرار دیتے ہوئے متعلقہ ادارے سے مکمل رپورٹ طلب کی ہے۔

اس خرابی کی وجہ سے لندن کے ہیتھرو ہوائی اڈے سے پرواز کرنے والی 83 اور گیٹ وک ہوائی اڈے سے اڑنے والی 19 پروازیں منسوخ کرنا پڑیں جبکہ دیگر میں کئی گھنٹے کی تاخیر ہوئی۔

ذرائع نے بی بی سی کو بتایا ہے کہ کمپیوٹر کے اس نظام میں خرابی پیدا ہوئی ہے جس کے ذریعے لندن پہنچنے والے جہازوں کو ایک طریقے سے لینڈ کرایا جاتا ہے۔

مانچسٹر ایئر پورٹ کا کہنا ہے کہ اس کے نظام میں کوئی خلل نہیں آیا ہے اور لندن میں جو جہاز لینڈ نہیں کر سکتے وہ مانچسٹر ہوائی اڈے پر لینڈ کرسکتے ہیں۔

ہیمپشر کے کنٹرول سینٹر انگلینڈ اور ویلز کی دو لاکھ مربع میل کی فضائی حدود کو کنٹرول کرتا ہے۔ اس سینٹر کی تعمیر پر 623 ملین پاؤنڈ کی لاگت آئی تھی اور اس میں 1300 کنٹرولر موجود ہوتے ہیں۔

یہ سینٹر روزانہ 5000 پروازوں کو کنٹرول کرتا ہے۔