پینسلوینیا: مسلح شخص کی فائرنگ سے 6 افراد ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption مسلح شخص ابھی تک مفرور ہے جس کی تلاش جاری ہے۔ فائل فوٹو

امریکی ریاست پینسلوینيا میں ایک مسلح شخص نے فائرنگ سے الگ الگ مقامات پر چھ افراد کو گولی مار کر قتل کر دیا ہے۔

حکام کے مطابق حملہ آور 35 سالہ بریڈلی ولیم سٹون ہے جس کی تلاش جاری ہے۔

پولیس نے حملہ آور کے پاس اور بھی ہتھیار ہونے کا خدشہ ظاہر کرتے ہوئے لوگوں سے گھر کے اندر رہنے کی اپیل کی ہے۔

کہا جا رہا ہے کہ ہلاک ہونے والی تمام لوگ حملہ آور کے خاندان سے تعلق رکھتے تھے۔

پولیس کے مطابق مسلح شخص کے سرخی مائل بال ہیں اور وہ خاکی لباس میں ملبوس ہے اور مبینہ طور پر چلنے کے لیے ایک چھڑی یا کین کا سہارا لیتا ہے۔

ہارلیز ولے میں فائرنگ کے واقعات مقامی وقت کے مطابق 4 بجے شروع ہوئے اور ہلاک کیے جانے والے افراد میں ایک خاتون بھی شامل ہیں جنہیں اُن کے گھر میں قتل کیا گیا۔

ہمسایوں کے مطابق انہوں نے مشتبہ شخص کو گھر سے دو بچوں کے ساتھ نکلتے ہوئے دیکھا اور یہ اطلاعات بھی ہیں کہ یہ بچوں کی کفالت کی وجہ سے ہو سکتا ہے۔

بی بی سی کی باربرا پلیٹ نے واشنگٹن سے بتایا ہے کہ بچوں کو اس جگہ سے کچھ فاصلے پر بالکل محفوظ حالت میں پایا گیا۔

پولیس نے پینزبرگ کے علاقے میں ایک مکان کو گھیرے میں لیا جہاں مشتبہ شخص رہائش پذیر ہے۔

پولیس نے میگافون کی مدد سے مشتبہ شخص کو اپنے آپ کو پولیس کے حوالے کرنے کا کہتے ہوئے کہا کہ ’آپ زیرِ حراست ہیں اپنے ہاتھ اوپر کر کے باہر آ جاؤ۔‘

ایک مقامی رہائشی اوڈری گیلینا نے فلاڈیلفیا انکوائرر اخبار کو بتایا کہ ’یہ ایک خاموش پرسکون قصبہ ہے اور یہ ایک المناک واقعہ ہے۔‘