صنعا: پولیس کالج کے باہر کار بم دھماکہ، متعدد افراد ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption دھماکہ اتنا شدید تھا کہ آواز شہر بھر میں سنی گئی

سکیورٹی حکام کا کہنا ہے کہ یمن کے دارالحکومت صنعا میں پولیس کالج کے باہر ایک دھماکے میں ’متعدد افراد ہلاک اور زخمی‘ ہو گئے ہیں۔

حکام کے مطابق بم گاڑی میں نصب تھا جو پولیس کالج کے باہر کھڑی کی گئی تھی اور وہاں طلبہ کی بھیڑ تھی۔

تاہم کسی آزاد ذرائع سے اس کی تصدیق نہیں ہو سکی ہے۔

عینی شاہدین کے مطابق اس دھماکے کی گونج شہر بھر میں سنی گئی اور جائے حادثہ سے دھویں کے مرغولے اٹھتے نظر آئے۔

سماجی رابطے کی سائٹوں پر جو تصاویر اپ لوڈ کی جا رہی ہیں ان میں ایک گاڑی کا ملبہ اور راستے میں پڑی لاشیں نظر آ رہی ہیں۔ ان تصاویر کے بارے میں دعوی کیا جا رہا ہے کہ وہ بدھ کو ہونے والے دھماکے کی تصاویر ہیں۔

ابھی تک کسی بھی گروپ نے اس دھماکے کی ذمہ داری قبول نہیں کی ہے۔

تاہم کہا جاتا ہے کہ القاعدہ کی شاخ نے وہاں حالیہ دنوں حملوں میں اضافہ کر رکھا ہے۔

یمن سنہ 2011 سے غیر مستحکم ہے جب حکومت مخالف تحریک کے سبب صدر علی عبداللہ صالح کو اپنے عہدے سے مستعفی ہونا پڑا تھا۔

جبکہ باغیوں ملک کے بعض حصے کو اپنے کنٹرول میں کر رکھا ہے۔

اسی بارے میں