آن سان سوچی کے گھر کا دروازہ نیلام ہو گا

تصویر کے کاپی رائٹ SOE NYUNT
Image caption ’اگر یہ عظیم دروازہ بول سکتا تو برما کی جمہوریت کے لیے 25 سالہ تاریخ بیان کرتا‘

برما کی نوبل انعام یافتہ رہنما آن سان سوچی کے گھر کا گیٹ نیلام کیا جائے گا۔

یہ گیٹ سنہ 2007 میں ان کی جماعت کے رنگوں سرخ اور پیلے رنگ میں پینٹ کیا گیا تھا۔ یہ گیٹ برما میں ان کی طویل نظر بندی کے باعث فوجی حکومت کے خلاف جدوجہد کی علامت بن گیا تھا۔

آن سان سوچی کے دوست اور حمایتی سوئی ننٹ کا کہنا ہے کہ نیلامی کا آغاز دو لاکھ ڈالر کی رقم سے کیا جائے گا۔ نیلامی سے حاصل ہونے والی رقم آن سان سوچی کی جماعت نیشنل لیگ فار ڈیموکریسی کے صدر دفتر کو ملے گی۔

آن سان سوچی نے سنہ 1990 اور سنہ 2000 کی دہائیوں کا زیادہ تر عرصہ گھر میں نظر بندی کے دوران گزارا۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption آن سان سوچی نے اسی گیٹ کے پیچھے سے باہر جمع ہونے والے اپنے حامیوں سے خطاب کیا

انھیں حاصل ہونے والی نسبتاً آزادی کے دنوں میں انھوں نے اسی گیٹ کے پیچھے سے باہر جمع ہونے والے اپنے حامیوں سے خطاب کیا تھا۔

یاگان میں بی بی سی کے نامہ نگار جونا فشر کا کہنا ہے کہ گھر میں نظر بندی کے دنوں میں یہی گیٹ ان کی جانب سے نافرمانی کے بعض دلیرانہ اقدامات کے لیے سٹیج بنتا رہا۔ سنہ 2010 میں اسی گیٹ کے پیچھے سے انھوں نے اپنی نظر بندی کے خاتمے کا جشن مناتے ہوئے اپنے حامیوں کے لیے ہاتھ لہرایا تھا۔

اس کے بعد یہ گیٹ سرمئی رنگ کے دروازوں سے تبدیل کر دیا گیا۔

سوئی ننٹ نے فیس بک پر ایک پوسٹ میں کہا: ’اگر یہ عظیم دروازہ بول سکتا تو برما کی جمہوریت کے لیے 25 سالہ تاریخ بیان کرتا۔‘

اس گیٹ کے ساتھ ساتھ آن سان سوچ کے گھر کا نمر ’54 ‘ بھی نیلام کیا جائے گا۔

سوئی ننٹ نے تاحال اس نیلامی کے لیے حتمی تاریخ کے بارے میں نہیں بتایا۔

تصویر کے کاپی رائٹ SOE NYUNT
Image caption آن سان سوچی کے گھر کا نمبر بھی نیلام کیا جائے گا

اسی بارے میں