دس چیزیں جن سے ہم گذشتہ ہفتے لاعلم تھے

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service

1۔ ابالے ہوئے انڈے کو دوبارہ غیر ابلی حالت میں لایا جاسکتا ہے۔

مزید جاننے کے لیے پڑھیے (میٹرو)

2۔نیدرلینڈز میں بچے امریکی بچوں کے مقابلے میں زیادہ مسکراتے، ہنستے اور گلے لگائے جانے سے زیادہ لطف اندوز ہوتے ہیں۔

مزید جاننے کے لیے پڑھیے (Eurekalert)

3۔لفظ ڈپلودوکس (diplodocus) کو چار مختلف طریقوں سے کہا جا سکتا ہے۔ لیکن اس کا بہترین تلفظ وہ ہے جو بچے استعمال کرتے ہیں نہ کہ وہ جو ادبی لوگ استعمال کرے ہیں۔

مزید جاننے کے لیے کلک کریں

4۔ ٹوائلٹ پیپر چھوٹا ہوتا جا رہا ہے۔

مزید جاننے کے لیے پڑھیے (واشنگٹن پوسٹ)

5۔ ٹی وی پر نشر ہونے والے کرائم ڈرامے دماغ کے لیے اچھے ہوتے ہیں۔

مزید جاننے کے لیے پڑھیے (ڈیلی ٹیلیگراف)

6۔ جو صبح جلدی اٹھتے ہیں وہ دوپہر کو سب سے زیادہ توانا ہوتے ہیں۔

مزید جاننے کے لیے کلک کریں

7۔اسرائیل میں واقع مینٹ غار ہی ممکنہ طور پر وہ جگہ ہے جہاں انسانوں اور نیندرتھل افراد نے سیکس کیا تھا۔

مزید جاننے کے لیے پڑھیے (گارڈیئن)

8۔ملاوی کی قومی فٹ بال ٹیم کو کچھ عرصے کے لیے کولچیسٹر سے تعلق رکھنے والے 17 سالہ لڑکے نے کوچ کیا۔

مزید جاننے کے لیے (فنانشل ٹائمز)

9۔ چوزے بڑے ہندسوں کو دائیں اور چھوٹے ہندسوں کو بائیں جانب سے پہنچانتے ہیں۔

مزید جاننے کے لیے کلک کریں

10۔2004 میں چین میں 24 فیصد گھروں میں فریج تھا۔ دس سال بعد یہ شرح 88 فیصد ہو گئی ہے۔

مزید جاننے کے لیے کلک کریں

اسی بارے میں