روس: بدعنوان افسران کے لیے تربیتی خاکہ

تصویر کے کاپی رائٹ Losinoostrovsky district council
Image caption یہ حکام کہہ رہے :’اثاثوں کے بارے میں بتانا تھا؟ میں مانتا ہوں کے میں اپنی گاڑی کے بارے میں بتانا بھول ہی گیا‘

روسی دارالحکومت ماسکو میں حکومت نے حکام کو بدعنوانی سے روکنے کے لیے ایک خاکے کا سہارا لیا ہے جو انھیں اس موضوع کے بارے میں تعلیم دیتا ہے۔

’لویستیا‘ اخبار کے مطابق ’بدعنوانی کے خلاف جنگ‘ نامی اس خاکے کے ذریعے نے اب تک تیس ہزار حکام کو رشوت نہ لینے کی تعلیم دی جا چکی ہے۔

اس خاکے کو سرکاری ’ماسکو سٹی یونیورسٹی‘ کے مینجمنٹ کے شعبے کے ارکان نے بنایا ہے اور خاکے میں مختلف افراد کو مشکل صورتحال میں ڈالا جاتا ہے اور پڑھنے والوں کو بتایا جاتا ہے کہ ایسے حالات میں کیا رد عمل ہونا چاہیے۔

اس خاکے میں حکام کو بدعنوانی سے خبردار رہنے والے واقعات بھی موجود ہیں۔ خاکے کے ایک حصے میں حکام کو بتایا جاتا ہے کہ وہ پچاس ڈالر سے کم قیمت کے تحفے قبول کر سکتے ہیں لیکن ایک ہی شخص سے بار بار تحفے نہیں لے سکتے۔

خاکا بنانے والے افراد کا کہنا ہے کہ اسے اس لیے بنایا گیا ہے کیونکہ اس خاکے میں پیش کیے جانے والا مواد دیکھنے والوں کے لیے کشش رکھتا ہے۔ ماسکو یونیورسٹی کی ایک ترجمان اولگا ولادیمیرووانے کہا کہ ’ہمارا مقصد قانون سازی کی زبان سے ہٹ کر ایک دلچسپ طریقے سےلوگوں کو بدعنوانی نہ کرنے کے بارے میں بتانا ہے۔‘

لویستیا اخبار کا کہنا ہے کہ شہر کے میئر کے نائبوں سمیت دیگر اعلٰی حکام کو بھی یہ ٹریننگ دی گئی ہے۔

اسی بارے میں