مصری بلی کا قدیم مجسمہ لاکھوں میں فروخت

تصویر کے کاپی رائٹ DAVID LAY
Image caption قدیم مجسمہ توقع سے زیادہ قیمت پر فروخت ہوا ہے

برطانیہ میں بے کار سمجھ کی تقریباً پھینک ہی دیے جانے والا مصری بلی کا قدیم مجمسہ 52,000 پاؤنڈز میں فروخت ہوا ہے۔

کانسی سے بنا بلی کا یہ مجسمہ 2,500 سال پرانا ہے اور یہ برطانیہ میں ایک مکان کو خالی کرنے کے دوران ملا تھا۔

نایاب مجسمے کو لندن کے ایک تاجر نے خریدا ہے۔ نیلامی سے پہلے یہ مجسمہ پانچ ہزار پاؤنڈ سے 10 ہزار پاؤنڈ تک فروخت ہونے کا اندازہ لگایا جا رہا تھا۔

نیلام گھر کے ایک اہلکار ڈیوڈ کے مطابق’کانسی کی بلی کے اصل مالکان کو آثارِ قدیمہ سے ملنے والی اشیا کی قدر کا اندازا نہیں تھا اور وہ اسے پھینکنے ہی والے تھے۔‘

ڈیوڈ کے مطابق انھیں معلوم ہوا ہے کہ اس بلی کے مالک ڈگلس لڈل تھے جو سنہ 2003 میں انتقال کر گئے تھے۔

انھوں نے مزید بتایا کہ مجمسے کی قدیم ہونے کی تصدیق برطانوی عجائب گھر کے ماہرین نے کی ہے۔

اس بلی کے بارے میں یہ خیال کیا جا رہا ہےکہ یہ تقریباً 700 قبلِ مسیح میں 26 ویں مصری شاہی خاندان کے دور کی ہے۔

نیلامی کرنے والے کا کہنا ہے کہ اس بلی کے اس مجمسے کو یقیناً مصر کی اعلیٰ ہستی نے مہنگے داموں بنوایا ہوگا۔

اسی بارے میں