’دولتِ اسلامیہ کے ہاتھوں مزید آٹھ افراد کی ہلاکت کی ویڈیو‘

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption دولتِ اسلامیہ کی جانب سے اس سے قبل بھی مغویوں کو قتل کیے جانے کی ویڈیوز جاری کی جا چکی ہیں

عراق اور شام میں سرگرم شدت پسند تنظیم دولتِ اسلامیہ کی جانب سے مبینہ طور پر جاری کی گئی ایک نئی ویڈیو میں نوجوان لڑکوں کو آٹھ قیدیوں کے سر قلم کرتے دکھایا گیا ہے۔

ویڈیو کے بارے میں یہ کہا جا رہا ہے کہ یہ شام کے مرکزی صوبے ہما میں بنائی گئی۔

خبر رساں ایجنسی اے پی کے مطابق اس ویڈیو کے بارے میں برطانیہ میں موجود شام کے اندر انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کا جائزہ لینے والے ادارے نے یہ خیال ظاہر کیا ہے کہ یہ ویڈیو اصلی ہے۔

ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ چند لڑکے ایک میدان میں آٹھ افراد کو لے کر جاتے ہیں اور پھر ایک لڑکا دیگر جنگجوؤں کو چھریاں دیتا ہے۔

جس کے بعد یہ لڑکے قیدیوں کے سر قلم کر دیتے ہیں۔

جن افراد کو ہلاک کیا گیا ہے ان کا تعلق شیعہ فرقے سے ظاہر کیا گیا ہے۔

یاد رہے کہ فروری میں دولتِ اسلامیہ نے لیبیا میں ایک ویڈیو جاری کی تھی جس میں 21 قبطی عیسائیوں کے سر قلم ہوتے ہوئے دکھائے تھے۔

اس کے علاوہ مارچ کے اوائل میں ایک ویڈیو میں ایک نوجوان لڑکے کے ہاتھوں اسرائیلی عرب قیدی کو گولی مارتے ہوئے دکھایا گیا ہے۔

اسی بارے میں