ہیلری کلنٹن امریکہ کی صدارتی دوڑ میں شامل

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption اگر ہیلری کلنٹن آئندہ صدارتی انتخابات جیت گئیں تو وہ امریکی کی پہلی خاتون صدر ہوں گی

امریکہ کی سابق وزیرِ خارجہ ہیلری کلنٹن نے ملک کی پہلی خاتون صدر بننے کے لیے سنہ 2016 کے صدارتی انتخاب میں حصہ لینے کا اعلان کر دیا ہے۔

انھوں نے اتوار کو صدارتی امیدوار بننے کا اعلان اپنی ویب سائٹ پر کیا۔

ہیلری کلنٹن نے امریکیوں سے کہا کہ وہ ان کی چیمپئین بننا چاہتی ہیں۔

کلنٹن نے اپنی ویب سائٹ پر ایک ویڈیو پیغام میں اعلان کیا ’میں صدارتی انتخاب میں حصہ لے رہی ہوں۔‘

ویڈیو پیغام میں ان کا کہنا تھا کہ امریکیوں کو ہر روز ایک چیمپئین کی ضرورت ہوتی ہے اور میں وہ چیمپئین بننا چاہتی ہوں۔

خیال رہے کہ ہیلریی کلنٹن سنہ 2008 میں بھی اپنی جماعت کی جانب سے صدراتی نامزدگی حاصل کرنے کے بہت قریب تھیں تاہم امریکہ کے موجودہ صدر براک اوباما سے ہار گئی تھیں۔

اگر ہیلری کلنٹن آئندہ صدارتی انتخابات جیت گئیں تو وہ امریکی کی پہلی خاتون صدر ہوں گی۔

بی بی سی کے شمالی امریکہ کے نامہ نگار کا کہنا ہے کہ ہلیری کلنٹن کے لیے ڈیموکریٹک پارٹی کی امیدواری جیتنا آسان ہے لیکن صدارتی انتخابات جیتنا تھوڑا مشکل ہوگا۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ ہیلری کلنٹن کی جماعت گذشتہ آٹھ سال سے اقتدار میں ہے اور انھیں مخالف رجحانات کا سامنا کرنا ہوگا۔

امید کی جا رہی ہے کہ ہیلری کلنٹن آئیووا اور نیو ہمشائر جائیں گی جہاں سنہ 2016 کے انتخاب کے لیے اولین پرائمری مقابلے ہوں گے۔

سنہ 2008 میں جب ڈیموکریٹ جماعت پرائمری انتخاب کروا رہی تھی کہ امریکہ کے صدر کے عہدے کے لیے کسے نامزد کیا جائے، تو ہیلری کلنٹن براک اوباما سے شکست کھا گئی تھیں۔ تاہم صدر بننے کے بعد براک اوباما نے انھیں وزیرِ خارجہ بنا دیا تھا اور وہ سنہ 2013 تک اس عہدے پر رہیں۔

امریکی صدر براک اوباما نے پانامہ میں سنیچر کو ایک نیو کانفرنس سے خطاب میں ہیلری کلنٹن کی تعریف کرتے ہوئے کہا تھا کہ وہ ایک ’بہترین صدر‘ بنیں گی۔

امریکی وزیرِ خارجہ جان کیری نے اے بی سی ٹی وی نیٹ ورک کو بتایا کہ ہیلری کلنٹن نے بطور سابق وزیرِ خارجہ بہترین خدمات انجام دیں۔

انھوں نے ہیلری کلنٹن کو اپنی ’اچھی دوست‘ قرار دیا۔

اسی بارے میں