فرانس کےمسافر طیارے کو دھمکی کے بعد جیٹ طیاروں کا حصار

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption ایئر فرانس کی پرواز فلائٹ 22 پیرس سے نیویارک جا رہی تھی

فرانس کے مسافر طیارے کو دھمکی آمیز پیغام ملنے کے بعد امریکی جنگی طیاروں نے اس کے گرد دورانِ پرواز حفاظتی حصار بنا لیا۔

ایئر فرانس کی پرواز فلائٹ 22 پیرس سے نیویارک جا رہی تھی۔

امریکی حکام کے مطابق انھوں نے ایک دھمکی آمیز کال موصول ہوئی جس میں کہا گیا تھا کہ طیارے میں ’کیمیائی ہتھیاروں کا خطرہ‘ ہے۔

نیویارک کے جے ایف کینیڈی ایئرپورٹ کے ایک محفوظ حصے میں طیارے کی لینڈنگ کے بعد ایف بی آئی طیارے اور سامان کی تلاشی لے رہی ہے۔

حکام نے اے بی سی نیوز کو بتایا کہ یہ دھمکی آمیز کال قابل بھروسہ نہیں تھی۔

خبررساں ادارے اے ایف پی کے مطابق فلائٹ اے ایف 22 بغیر کسی حادثے کے مقررہ وقت پر لینڈ ہو گئی اور سکیورٹی چیک کے لیے اسے ایئر پورٹ کے خصوصی حصے میں لے جایا گیا۔

ایئر فرانس کے ایک اہلکار نے اے ایف پی کو بتایا کہ انھیں دھمکی آمیز پیغام امریکہ سے موصول ہوا تھا۔

پینٹاگون نے تاحال اس واقعے کے بارے میں کوئی بیان جاری نہیں کیا۔

واضح رہے یہ دھمکی آمیز پیغام ملنے کا واقعہ امریکہ میں یوم تاسیس کی چھٹی کے اگلے روز پیش آیا ہے۔

امریکی ذرائع ابلاغ نے میری لینڈ کورڈینیشن اینڈ انیلیسس سینٹر کے حوالے سے بتایا کہ مسافر طیارے کو حفاظتی حصار میں پہنچانے والے طیارے امریکی تھے۔

میری لینڈ پولیس کا کہنا ہے کہ انھیں مقامی وقت کے مطابق چھ بج کر 30 منٹ پر کال موصول ہوئی جس کے بعد اس کی اطلاع ایف بی آئی کو کر دی گئی۔

اسی بارے میں