پل بچانے کے لیے محبت کی ’قربانی‘

تصویر کے کاپی رائٹ THINKSTOCK

فرانس کے دارالحکومت پیرس کے ایک پل پر ’اٹوٹ‘ محبت کی علامت کے طور پر لگائے گئے ہزاروں تالوں کو ہٹانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty

دریائے سین پر واقع اس پل پرمحبت کرنے والے اپنی محبت امر کرنے کے لیے پل پر لگے جنگلے پر تالے لگا کر چابی دریا میں پھینک دیتے ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ

حکام کا کہنا ہے کہ یکم جون سے پل پر لگے تمام تالے ہٹا دیے جائیں گے کیونکہ یہ تالے پل کے لیے خطرہ بنتے جا رہے ہیں۔

وقت کے ساتھ ساتھ ان تالوں کا وزن اتنا زیادہ بڑھ گیا ہے کہ اس کی وجہ سے پل کا ایک حصہ گذشتہ سال متاثر ہوا تھا.

تصویر کے کاپی رائٹ

ایک اندازے کے مطابق اس پل پر تقریباً دس لاکھ تالے لگے ہیں جن کا وزن 45 ٹن کے قریب ہو سکتا ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ AP

ان تالوں کو کاٹ کر ہٹا دیا جائے گا اور اب اس پل کے کنارے لگے جنگلوں کی جگہ تصاویر لگائی جائیں گی۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP

پیرس کے ڈپٹی میئر برونو جليارڈ نے کہا ہے کہ ’ہم چاہتے ہیں کہ پیرس محبت کا دارالحکومت بنا رہے اور لوگوں کو محبت کے اظہار کے لیے نئے مواقع دیے جائیں گے۔