امریکہ میں ہوائی اڈوں پر سکیورٹی اصلاحات کا حکم

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption ایک ٹیسٹ کے دوران ایک سکرینر ایک ایجنٹ کی کمر پر چپکائے گئے نقلی بم کو تلاش کرنے میں ناکام ہو گیا

ایک اعلیٰ امریکی اہلکار نے ملک کے ہوائی اڈوں پر سکیورٹی کو مزید موثر بنانے کے لیے نئی اصلاحات متعارف کرانے کا وعدہ کیا ہے۔

یہ بیان ایک ایسے وقت میں سامنے آیا ہے جب امریکہ میں ہوائی اڈوں پر تعینات سکریننگ کرنے والے اہلکاروں کے ٹیسٹوں سے معلوم ہوا ہے کہ وہ ہوائی اڈوں سے گزارے جانے والے 95 فیصد نقلی دھماکہ خیز مواد اور ہتھیاروں کو نہیں پکڑ سکتے۔

پیر کو ہوم لینڈ سکیورٹی کے سیکریٹری جے جانسن نے امریکہ کے تمام ہوائی اڈوں پر سکیورٹی کے طریقہ کار میں تبدیلی کرنے کی ہدایت کی ہے۔

ایک ٹیسٹ کے دوران ایک سکرینر ایک ایجنٹ کی کمر پر چپکائے گئے نقلی بم کو تلاش کرنے میں ناکام ہو گیا تھا۔

ان ٹیسٹوں کے نتائج کی خبر امریکی نیوز چینل اے بی سی نے رپورٹ کی تھی۔

اے بی سی کے مطابق یہ ٹیسٹ امریکہ میں 70 ہوائی اڈوں پر کیے گئے تھے جن میں سے صرف تین پر ہی ممنوعہ ہتھیار پکڑے جا سکے تھے۔

جے جانسن کا کہنا ہے کہ سکیورٹی اہلکاروں کو دوبارہ سے تربیت دینے اور تمام سکیننگ آلات کو ٹیسٹ کرنے کی ضرورت ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ وہ ان تمام ٹیسٹوں کے نتائج کو سنجیدگی سے دیکھ رہے ہیں۔

انھوں نے مزید کہا کہ ’ان رپورٹوں میں سامنے آنے والے نتائج سیاق و سباق کے حوالے سے بالکل اچھے نہیں ہیں لیکن یہ ہوائی اڈوں کی سکیورٹی کے مسلسل ارتقا میں اہم عنصر ہیں۔‘

جانس نے کہا کہ ’ہم ان نتائج کو بہت سنجیدگی سے لے رہے ہیں اور ہم مسلسل ٹیسٹ کرتے رہیں گے تاکہ درپیش خطرات سے نمٹنے کے لیے اپنی صلاحیتوں اور تکنیک کو بہتر بنا سکیں۔‘

ان کا کہنا تھا کہ ان ٹیسٹوں کے نتائج کو خفیہ رکھا گیا ہے اور ان کے مطابق چیک پوائنٹوں پر اس قسم کے مزید خفیہ ٹیسٹ کیے جائیں گے۔

اسی بارے میں