انگیلا میرکل کا فون ٹیپ کرنے کی تحقیقات ختم

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption فون ٹیپ کرنے کے الزامات کے بعد امریکہ اور جرمنی کے تعلقات میں کشیدگی پیدا ہوگئی تھی

جرمنی نے امریکی سکیورٹی ایجنسی (این ایس اے) کی جانب سے مبینہ طور پر چانسلر انگیلا میرکل کا فون ٹیپ کرنے کی تحقیقات ختم کر دی ہیں۔

وفاقی استغاثہ ہارلڈ رینج کا کہنا ہے کہ این ایس اے قانونی چارہ جوئی کے جواز کے لیے شواہد فراہم کرنے میں ناکام رہا ہے۔

این ایس اے کی جانب سے فون ٹیپ کیے جانے کے الزامات سنہ 2013 میں سی آئی اے کے سابق اہلکار ایڈورڈ سنوڈن کی طرف سے امریکہ کی بڑے پیمانے پر نگرانی کرنے کے راز افشا کرنے کے بعد سامنے آئے تھے۔

جس کے بعد امریکہ اور جرمنی کے تعلقات میں کشیدگی پیدا ہوگئی تھی۔

جب یہ الزامات عائد کیے گئے تھے تو اس وقت وائٹ ہاؤس نے اس کی واضح تردید نہیں کی تھی۔ تاہم ان کا کہنا تھا کہ انگیلا میرکل کے فون کی اس وقت نگرانی نہیں کی جا رہی اور نہ ہی مستقبل میں کی جائے گی۔

گذشتہ برس چار جون کو ہارلڈ رینج کا کہنا تھا کہ ’اس حوالے سے مناسب حقائق موجود ہیں جس سے ظاہر ہوتا ہے کہ امریکی انٹیلی جنس سروس کے نامعلوم ارکان نے چانسلر انگیلا میرکل کے فون کی جاسوسی کی تھی۔‘

تاہم دسمبر میں ان کا کہنا تھا کہ’یہ بات سامنے آئی ہے کہ تحقیقات ٹھیک طرح سے نہیں کی گئیں اور انھیں اس قدر شواہد نہیں ملے جس کی بنیاد پر عدالت میں انھیں کامیابی مل سکے۔‘

اسی بارے میں