برہنہ تصاویر: چار سیاحوں کو قید، جرمانہ

Image caption ہاکنز کے والد کا کہنا ہے کہ اس معاملے کو حد سے زیادہ نہیں بڑھانا چاہیے

ملائیشیا میں کوہِ کنابلو پر برہنہ حالت میں تصاویر بنوانے کے جرم میں ملائیشیا کی عدالت نےچار سیاحوں کو قید اور جرمانے کی سزا سنائی ہے۔

جن چار سیاحوں کو سزا سنائی گئی ہے ان میں برطانیہ کی ایلننور ہاکنز، کینیڈا کی لنڈسے اور ڈینیئل پیٹرسن اور نیدرلینڈز کے ڈائلن سیل شامل ہیں۔

ان چاروں سیاحوں نے امنِ عامہ خراب کرنے کا اعتراف کیا۔

ان چاروں سیاحوں کو تین دن کی قید کی سزا سنائی گئی ہے تاہم یہ سزا اس وقت شروع ہوئی جب ان کو حراست میں لیا گیا۔

عدالت نے کہا کہ چاروں سیاحوں کو اپنے کیے پر پچھتاوہ ہے اور ان کی سزا 9 جون سے تین روز کے لیے ہو گی۔

عدالت نے چاروں سیاحوں کو 1330 ڈالر فی کس کا جرمانہ بھی کیا۔

کوہِ کنابلو پر گذشتہ جمعے کو ریکٹر سکیل کے مطابق 6.0 شدت کا زلزلہ آیا تھا جس میں بچوں سمیت 18 افراد ہلاک ہو گئے تھے۔

گذشتہ ہفتے ایک سینیئر وزیر نے کہا تھا کہ سیاحوں نے پہاڑ کی روح کو غصہ دلا دیا تھا۔ مقامی طور پر کوہِ کنابلو کو مقدس اور مذہبی طور سے اہم پہاڑ تصور کیا جاتا ہے۔

ملائیشیا معاشرتی طور پر ایک قدامت پسند مسلمان ملک ہے اور سباہ کے کدزان دسن قبیلے کے لیے کوہِ کنابلو ایک مقدس مقام ہے۔

جب سیاحوں نے یہ تصاویر سوشل میڈیا پر شائع کیں تو ملائیشیا میں غم و غصے کا اظہار کیا گیا اور دوسری طرف زلزلے کے بعد اس میں شدت آ گئی۔

کوہِ کنابلو مقدس کیوں ہے؟

سباہ کے کدزان دسن قبیلے کا خیال ہے کہ اس پہاڑ میں ان کے آبا و اجداد کی روحیں موجود ہیں۔ اس پہاڑ کا نام کنابلو بھی اس قبیلے کے ایک محاورہ ’اکی نابلو‘ سے آتا ہے، جس کا مطلب مر جانے والوں کی آرام گاہ۔ سیاحوں کو گائیڈ ہمیشہ ہدایات دیتے ہیں کہ اس پہاڑ کا احترام کیا جائے اور اس پر جاتے وقت چیخنے چلانے سے پرہیز کیا جائے۔

ہر دسمبر میں کدزان دسن قبیلے کے لوگ مونلب نامی مذہبی رسومات کا انعقاد کرتے ہیں اور اُن کا عقیدہ ہے کہ ان رسومات کی وجہ سے لوگ پہاڑ پر بغیر اپنے آبا و اجداد کی توہین کے چڑھ سکیں گے۔

اس موقعے پر بوبلیاں نامی ایک راہبہ اس پہاڑ کو سات سفید مرغیوں، سات مرغیوں کے انڈوں، پان کے پتوں، تمباکو اور چونے کا نذرانہ پیش کرتی ہیں۔

اسی بارے میں