تین ہسپانوی صحافی شام میں لاپتہ

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption پریس ایسوسی ایشن ایف اے پی ای کے مطابق تینوں افراد 10 جولائی کو ترکی کے راستے شام میں داخل ہوئے تھے

سپین کے ذرائع ابلاغ کے مطابق تین ہسپانوی صحافی شام میں لاپتہ ہوگئے اور خیال کیا جارہا ہے کہ انھیں اغوا کر لیا گیا ہے۔

انتونیو پاپلیگا، ہوزے مینوئل لوپیز اور انیجل ساسترے شام کے شمالی شہر حلب میں کام کر رہے تھے۔

سپین کی پریس ایسوسی ایشن ایف اے پی ای کے مطابق ان تینوں افراد سے 10 جولائی کو ترکی کے راستے شام میں داخل ہونے کے بعد رابطہ نہیں ہوسکا۔

سپین کی وزارت خارجہ کا کہنا ہے کہ وہ صورتحال سے آگاہ ہے اور ’اس پر کام پر رہے‘ تھے۔

ایف اے پی ای کے صدر ایلسا گونزالیز کا کہنا ہے کہ ’ہم نہیں جانتے کہ (وہ ایک ساتھ) حلب میں تفتیشی رپورٹس کر رہے تھے، صرف اتنا جانتے ہیں کہ ایک سال قبل اسی علاقے میں سپین کے تین صحافی اغوا کیے گئے تھے۔‘

واضح رہے کہ شدت پسند تنظیم گذشتہ ایک سال کے دوران شام میں مغربی صحافیوں کو اغوا اور ہلاک کر چکی ہے اور صوبہ حلب کے شمالی اور مشرقی علاقے ان کے قبضے میں ہیں۔

حلب شہر میں گذشتہ تین سال سے شامی حکومت اور باغی گروہوں کے درمیان شدید لڑائی بھی جاری ہے۔

شدید لڑائی اور حکومتی فضائی بمباری سے ہزاروں شہریوں ہلاکت اور شہر کا 60 فیصد قدیم علاقہ تباہ ہوچکا ہے۔

اسی بارے میں