ہانگ کانگ ہوائی اڈے پر ڈالروں سے بھرا بیگ گم ہو گیا

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption بینک آف چائنا کے لیے رقم منتقل کرنے والی کمپنی جی فور ایس انٹرنیشنل لاجسٹکس کا کہنا ہے کہ پیسہ اس وقت تک محفوظ تھا جب تک وہ ہوائی اڈے کے اس حصے میں نہیں گیا جہاں طیاروں کے پیشِ نظر ان کے عملے کو کوئی رسائی حاصل نہیں تھی

ہانگ کانگ کے ہوائی اڈے پر ایئر لائن کیتھے پیسفک کے ایک طیارے سے سامان منتقل کرنے کے دوران ایک بیگ لاپتہ ہوگیا ہے جس میں نیوزی لینڈ کی کرنسی کے دس لاکھ ڈالر موجود تھے۔ یہ رقم تقریباً چھ لاکھ پنسٹھ ہزار امریکی ڈالر کے برابر ہے۔

چین کے سرکاری ذرائع ابلاغ کے مطابق یہ بیگ ان تیرہ بیگوں میں سے ایک تھا جن میں کل ایک کروڑ نیوزی لینڈ ڈالر موجود تھے اور نیوزی لینڈ سے یہ رقم ہانگ کانگ میں موجود بینک آف چائنا کو بھیجی جا رہی تھی۔

ان کا کہنا ہے پولیس اس واقعے کو بطور ایک چوری دیکھ رہے ہیں۔

جائے وقوع کی ویڈیو فوٹیج میں دیکھا جا سکتا ہے کہ سامان کی منتقلی کے لیے استعمال کیے جانے والے ٹرک کے موڑ کانٹے کے دوران تین بیگ گر گئے۔ دس منٹ کے بعد جب عملے کو احساں ہوا کہ تین بیگ لاپتہ ہیں تو وہ جائے وقوع پر واپس پہنچے مگر وہاں سے صرف دو ہی بیگ مل سکے۔

ایئر لائن کی جانب سے جاری کردہ بیان میں اس بات کی تصدیق کی کہ جمعے کو انھوں نے ’قیمتی کارگو‘ ہانگ کانگ پہنچایا۔ انھوں نے کہا کہ ’آمد پر اسے ہوائی اڈے کے ٹرمینل میں بھیج دیا گیا۔ کیونکہ معاملہ اب پولیس کے پاس زیرِ تفتیش ہے چنانچہ ہم اس وقت اور کچھ نہیں کہہ سکتے۔‘

بینک آف چائنا کے لیے رقم منتقل کرنے والی کمپنی جی فور ایس انٹرنیشنل لاجسٹکس کا کہنا ہے کہ پیسہ اس وقت تک محفوظ تھا جب تک وہ ہوائی اڈے کے اس حصے میں نہیں گیا جہاں طیاروں کے پیشِ نظر ان کے عملے کو کوئی رسائی حاصل نہیں ہوتی ہے۔

کمپنی کا کہنا ہے کہ رقم انشورنس کی حفاظت میں ہے۔

اسی بارے میں