قاہرہ کی فیکٹری میں آتشزدگی سے 25 افراد ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption مصر میں اکثر حفاظتی تدابیر کو ملحوظِ خاطر نہیں رکھا جاتا جس کے باعث اس طرح کے واقعے پیش آتے رہتے ہیں

مصر کے دارالحکومت قاہرہ میں فرنیچر بنانے والی ایک فیکٹری میں آگ لگنے سے کم از کم 25 افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔

اطلات کے مطابق الحلو نامی اس فیکٹری میں کام کرنے والے 150 مزدوروں کو بچا بھی لیا گیا ہے۔

مصر کی وزاتِ داخلہ کے ایک اہکار کا کہنا ہے کہ عمارت میں آگ سے بچاؤ کا نظام تصدیق شدہ نہیں تھا۔

خیال کیا جارہا ہے کہ آگ گیس سلنڈر کے پھٹنے کی وجہ سے لگی اور دیکھتے ہی دیکھتے آگ نے فیکٹری کی تین منزلہ عمارت کو اپنی لپیٹ میں لے لیا۔

خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق مصر کی وزاتِ صحت کے ترجمان حسام عبدالغفار کا کہنا ہے کہ اس واقعے میں 22 افراد زخمی بھی ہوئے ہیں۔

حکام کا کہنا ہے کہ فائربریگیڈ کا عملہ موقعے پر پہنچ گیا ہے اور آگ پر قابو پانے کی کوشش کی جارہی ہے۔

نامہ نگاروں کے مطابق مصر میں اکثر حفاظتی تدابیر کو ملحوظِ خاطر نہیں رکھا جاتا جس کے باعث اس طرح کے واقعے پیش آتے رہتے ہیں۔

سماجی رابطوں کی سائٹس پر پوسٹ کی گئی وڈیو میں عمارت سے دھویں کے بادل اٹھتے ہوے دیکھے جا سکتے ہیں۔

واضع رہے کہ گزشتہ برس ستمبر میں دارالحکومت قاہرہ میں ہی ایک ٹیکسٹائل مل کی عمارت گر گئی تھی جس کے نتیجے میں چھ افراد ہلاک اور 22 زخمی ہوگئے تھے۔

اسی بارے میں