فرانس کا یورو ٹنل کی سکیورٹی میں اضافے کا اعلان

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption تارکینِ وطن کی کوشش کی وجہ سے منگل کو يورو ریل کی سروس بھی متاثر ہوئی

فرانس نے ہزاروں تارکینِ وطن کی جانب سے برطانیہ اور فرانس کو ملانے والی زیرِ آب سرنگ ’چینل ٹنل‘ میں گھسنے کی ایک اور کوشش کے بعد اپنے سرحدی شہر کیلے میں پولیس کے مزید 120 اہلکار تعینات کرنے کا اعلان کیا ہے۔

فرانسیسی پولیس کے مطابق پیر کی شب دو ہزار افراد کی سرنگ میں داخلے کی کوشش کے بعد منگل کی شب مزید ڈیڑھ ہزار افراد نے اس سرنگ کے راستے برطانوی سرزمین کا رخ کرنے کی کوشش کی اور اس دوران ایک شخص ہلاک بھی ہوا ہے۔

ادھر کیلے میں موجود تارکینِ وطن نے بی بی سی سے بات کرتے ہوئے اپنی کوششیں جاری رکھنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ 400 افراد تک کے گروہوں میں برطانیہ جانے کی کوشش کرنے سے ان کی کامیابی کے امکانات سب سے زیادہ ہوتے ہیں۔

چینل ٹنل کی منتظم کمپنی کا کہنا ہے کہ کچھ تارکینِ وطن اب بھی چینل ٹنل کے پاس موجود ہیں جس وجہ سے آمدورفت متاثر ہو رہی ہے۔

فرانس کے وزیرِ داخلہ برنارڈ زینووی کا کہنا ہے کہ اضافی پولیس اہلکار عارضی طور پر کیلے میں تعینات رہیں گے اور سرحد اور سرنگ کو محفوظ بنانے میں مدد دیں گے۔

ہلاک ہونے والے شخص کے بارے میں خیال کیا جا رہا ہے کہ وہ سوڈان کا شہری تھا اور اس کی عمر 25 سے 30 سال کے درمیان تھی۔

فرانسیسی پولیس حکام کے مطابق یہ شخص شاید سرنگ سے نکلنے والے ایک ٹرک کے نیچے آ کر ہلاک ہوا ہے۔

اس سال جون سے چینل ٹنل میں گھسنے کی کوشش میں یہ ہلاک ہونے والا نواں شخص ہے۔

واضح رہے کہ پیر کی شب بھی تقریباً دو ہزار تارکین وطن نے فرانسیسی علاقے میں سرنگ کے ٹرمینل میں گھسنے کی کوشش کی تھی۔

بی بی سی کے گیون لی کا کہنا ہے کہ تارکین وطن کہتے ہیں کہ وہ حفاظتی باڑ میں موجود متعدد سوراخوں کے راستے سرحد عبور کرنے کی کوششیں جاری رکھیں گے۔

چینل ٹنل نامی یہ زیرِ آب سرنگ رودبادِ انگلستان کے راستے دونوں ممالک کو ملاتی ہے اور یورو ٹرین سروس اسی سرنگ کا استعمال کرتی ہے۔

يورو ٹنل کو آئے دن ایسے تارکین وطن سے نمٹنا پڑتا ہے جو سرنگ کے ذریعے غیر قانونی طریقے سے برطانیہ پہنچنا چاہتے ہیں۔

اے ایف پی کے مطابق كیلے میں اس ماہ کے آغاز سے ایسے تین ہزار لوگوں کا پتہ چلا ہے جو وہاں سے برطانیہ میں گھسنے کی کوشش میں تھے۔

ان افراد کا تعلق ایتھیوپيا، اریٹیریا، سوڈان اور افغانستان سے بتایا جاتا ہے۔

غیر قانونی تارکین وطن کی وجہ سے پیش آنے والی مشکلات کی وجہ سے يورو ٹنل نے فرانس اور برطانیہ کی حکومتوں سے زرِ تلافی دینے کا مطالبہ کیا ہے۔

.

اسی بارے میں