امریکہ میں ممنوعہ ادویات کے خلاف کریک ڈاؤن، 16 لیبارٹریاں بند

امریکہ میں ادویات کی نگرانی کرنے والے ادارے نے غیرقانونی سٹیروئڈ اور کارکردگی بڑھانے والی دیگر ممنوعہ ادویات کے خلاف کارروائی کرتے ہوئے 16 لیبارٹریاں بند کرا دی ہیں اور 90 سے زائد افراد کو گرفتار کیا ہے۔

ڈرگ انفورسمنٹ ایڈمنسٹریشن (ڈی ای اے) کے مطابق پانچ ماہ کے دوران امریکہ کی 20 ریاستوں میں ہزاروں ٹن کیمیکل قبضے میں لیا گیا ہے۔

چین سے انٹرنیٹ کے ذریعے منشیات کا کاروبار کرنے والی خفیہ لیبارٹریوں کے خلاف ’آپریشن سائبر جوس‘ کے ذریعے کارروائی کی جا رہی ہے۔

اس تازہ کارروائی میں تقریباً 20 لاکھ امریکی ڈالر مالیت کی ادویات سٹیروئڈ پاؤڈر اور سیال مادہ کو ضبط کیا گیا ہے۔

ڈی ای اے کے ترجمان چک روزنبرگ کا کہنا تھا کہ بہت بڑی تعداد میں نوجوان اپنے جسم اور اپنی زندگیاں ان سٹیروئڈز کے استعمال سے تباہ کررہے تھے۔ لیکن اس آپریشن کے ذریعے’عالمی زیرِ زمین سٹیروئڈ مارکیٹ‘ کو نشانہ بنا کر اس کے نقصانات اور جھوٹ کو بے نقاب کردیا گیا ہے۔

یہ آپریشن رواں سال اپریل میں شروع ہوا تھا جو نو افراد کی گرفتاری کے بعد منگل کو ختم ہوا۔

ڈی ای اے کے مطابق پکڑی جانے والی بیشتر منشیات چین کی کیمیکل بنانے والی کمپنیوں سے خریدی گئی تھیں جس کے بعد اُنھیں سٹیروئڈز کی شکل میں خفیہ لیبارٹریوں میں منتقل کیا جاتا تھا جو اُنھیں امریکی بلیک مارکیٹ میں فروخت کرتی تھیں۔

ایریزونا میں چار نام نہاد سٹیروئڈ کی تبدیلی کی لیبارٹریوں کو بند کر دیا گیا ہے جبکہ ادویات کی ڈیڑھ لاکھ تیار خوراکیں تحویل میں لے لی گئی ہیں۔

اسی بارے میں