’برہنہ تصاویر بھیجنے پر ملازمت ختم‘

تصویر کے کاپی رائٹ
Image caption پولیس کا کہنا ہے کہ اس شخص نے دو مواقعوں پر خاتون مینیجر کو نامناسب تصاویر ٹیکسٹ کیں

امریکی ریاست شکاگو کے ایک رہائشی سے اس بنا پر ملازمت کی مشروط پیشکش واپس لے لی گئی ہے کیونکہ اس نے حادثاتی طور پر اپنی خود کی بنائی ہوئی برہنہ تصاویر اس محکمے کی اعلیٰ خاتون افسر کو بھیج دیں جہاں سے اسے نوکری کی مشروط پیشکش ہو چکی تھی۔

ایلمرسٹ پولیس نے شخص کا نام ظاہر نہ کرتے ہوئے بتایا کہ ایک شخص نے 11 اور 13 اگست کو اپنی برہنہ تصاویر اس کمپنی کی ہیومین ریسورس سیکشن کی سربراہ کو بھیجیں جہاں وہ انٹرویو دے کر ملازمت کی مشروط پیشکش حاصل کر چکے تھے۔

خاتون مینیجر نے جب ٹیکسٹ وصول کیے اس وقت وہ دفتر میں نہیں بلکہ گھر میں موجود تھیں۔ انھوں نے نامناسب تصاویر موصول ہونے پر پولیس کو مطلع کیا۔

پولیس نے جب مذکورہ شخص سے رابطہ کیا تو اس نے برہنہ تصاویر بھیجنے کے واقعات کو تسلیم کیا لیکن ساتھ یہ بھی کہا کہ یہ تصاویر کسی اور کو بھیجنا مقصود تھیں اور غلطی سے دوسرے شخص کو چلی گئی ہیں۔

اس کمپنی نے جس کی خاتون مینیجر کو نامناسب تصاویر بھیجی گئیں اس کمپنی نے تصاویر بھیجنے والے شخص کو نوکری کی مشروط پیشکش کر رکھی تھی۔

ایلمرسٹ پولیس کے سربراہ مائیکل روتھ نے شکاگو ٹرائیبون کو بتایا کہ ان کی اطلاع کے مطابق کپمنی نے ملازمت کی پیشکش واپس لے لی ہے۔

مینیجر نے نامناسب تصاویر بھیجنے والے شخص کے خلاف مزید کارروائی کا ارادہ ترک کر دیا ہے اور اسے مشورہ دیا گیا ہے کہ کمپنی سے مزید رابطہ نہ کریں۔

پولیس سربراہ مائیکل روتھ نے کہا کہ ان کے پاس نوجوانوں کی طرف سے نامناسب تصاویر بھیجنے کی شکایات میں اضافہ ہوا ہے۔

اسی بارے میں