کولمبیا: حکومت اور باغی تنظیم کے درمیان معاہدہ

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption کولمبیا کے صدر جوان مینوئیل سانتوس اور باغی تنظیم کے رہنما رودریگو لندونو کے درمیان کیوبا کے دارالحکومت ہوانا میں ملاقات ہوئی

کولمبیا کے صدر اور باغیوں کی تنظیم فارک کے رہنما نےگذشتہ پانچ عشروں کے تنازعے کے دوران ہونے والے جرائم پر عدالتی کارروائی کے لیے خصوصی عدالتوں کے قیام پر ہونے والے معاہدے کا اعلان کیا ہے۔

بات چیت کے بعد حقائق کو اجاگر کرنے والے ایک کمیشن اور بعض خاص افراد کو قانونی چارہ جوئی سے الگ رکھنے کے لیے ایک خاص قانون بنانے کا بھی اعلان کیا ہے۔

کولمبیا کے صدر ہوان مینوئل سانتوس اور باغی تنظیم کے رہنما رودریگو لندونو کے درمیان کیوبا کے دارالحکومت ہوانا میں ملاقات ہوئی۔

امن کے لیے گذشتہ تین برس سے جاری یہ بات چیت کیوبا کی ثالثی میں ہو رہی ہے اور اس معاہدے کو اس سمت میں بڑی کامیابی کے طور دیکھا جا رہا ہے۔

کولمبیا کے صدر مسٹر سانتوس نے کہا: ’اب امن کا وقت آپہنچا ہے۔‘ ان کا کہنا تھا کہ انھوں نے لندونو سے اس بات پر اتفاق کیا ہے کہ امن کے حتمی معاہدے پر چھ ماہ کے اندر دستخط ہو جائیں گے۔

ان کا کہنا تھا: ہم 23 مارچ 2016 کو جنوبی امریکہ کے سب سے طویل تنازعے کو الوداع کہہ رہے ہوں گے۔‘

بدھ کے روز جس معاہدے پر دستخط ہوئے اس کے مطابق فوجیوں کو عدالتی چارہ جوئی سے استثنیٰ حاصل ہو گا لیکن جو انسانی حقوق کی پامالیوں اور جنگی جرائم کے مرتکب ہوں گے وہ اس کے دائرے سے خارج ہوں گے۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption باغی تنظیم فارک کے ہزاروں جنگجو اب بھی حکومتی افواج سے نبرد آزما ہیں

بہت سے تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ انصاف کے لیے خصوصی عدالتوں کا قیام بات چیت کا مشکل ترین حصہ تھا۔

کیوبا کے صدر راؤل کاسترو نے اس موقعے پر کہا کہ امن اب پہلے سے بہت قریب ہے۔ ’ہم پہلے سے بہت آگے نکل چکے ہیں اور مجھے یقین ہے کہ تمام مشکلات کو دور کر لیا جائے گا۔‘

باغیوں کی تنظیم کے ساتھ اصلاح اراضی، سیاست میں شراکت اور منشیات سے متعلق معاہدہ پہلے ہی ہو چکا ہے۔

کولمبیا میں باغیوں اور حکومت کے درمیان پانچ عشروں تک چلنے والے تنازع میں تقریباً دو لاکھ 20 ہزار افراد ہلاک ہوئے ہیں۔

اس دوران تقریباً 50 لاکھ افراد بے گھر ہوئے ہیں اور تقریبا 70 لاکھ لوگ اس سے کسی نہ کسی طرح متاثر ہوئے ہیں۔

اب بھی فارک کے تقریباً آٹھ ہزار جنگجو حکومت کے ساتھ نبرد آزما ہیں۔

اسی بارے میں