فرانس میں ٹرک اور بس کے تصادم میں 42 افراد ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption 1982 میں فرانس کے علاقے بونا میں ہونے والے حادثے کے بعد یہ فرانس کی تاریخ کا بدترین ٹریفک حادثہ ہے۔

جنوب مغربی فرانس میں ٹرک اور بس کے درمیان تصادم کے نتیجے میں کم سے کم 42 افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔

اطلاعات کے مطابق دونوں گاڑیوں میں تصادم فرانس کے شہر بوردو کے مشرقی علاقے پویسگاں میں ہوا۔

خبر رساں ادارے سِڈ اویسٹ کے مطابق بس میں عمر رسیدہ افراد سوار تھے جو چھٹیاں منانے جا رہے تھے۔

خبروں کے مطابق سنہ 1982 میں فرانس کے علاقے بونا میں ہونے والے حادثے کے بعد یہ فرانس کی تاریخ کا بدترین ٹریفک حادثہ ہے۔اُس حادثے میں 52 افراد ہلاک ہو گئے تھے۔

فرانس کے نیوز چینل بی ایف ٹی وی کے مطابق ٹریفک حادثہ یک طرفہ سڑک پر پیش آیا، اور تصادم کے بعد دنوں گاڑیوں میں آگ بھڑک اُٹھی۔

حادثے کے بعد صرف آٹھ مسافر آگ سے بچ نکلنے میں کامیاب ہوئے جن میں سے پانچ زخمی ہیں۔

چینل کے مطابق بس قریبی قصبے سے تعلق رکھنے والے مسافروں کو لے کر جا رہی تھی۔

فرانس کے صدر فرانسوا اولاند نے ٹویٹ کیا ہے کہ حکومت’اِس خوفناک حادثے کے بارے میں پوری طرح متحرک ہے۔‘ صدر کا کہنا تھا کہ وہ اس ’سانحے کا سن کر انتہائی دکھ کا شکار ہوئے ہیں۔‘

مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ یہ حادثہ علاقے کے ایک نہایت خطرناک موڑ پر پیش آیا جب عمارتی لکڑی سے لدا ہوا ٹرک مخالف سمت سے آتی ہوئی مسافر بس سے ٹکرا گیا۔

بس اور ٹرک کے تصادم کے فوراً بعد دونوں کو آگ لگ گئی تھی۔

فرانسیسی حکام کے مطابق ہلاک ہونے والوں میں بس میں سوار 41 مسافر اور ٹرک کا ڈرائیور شامل ہیں جبکہ حادثے میں نو افراد زخمی ہوئے ہیں جن میں سے چار کی حالت نازک ہے۔

اطلاعات ہیں کہ فرانس کے وزیر داخلہ بھی جائے حادثہ کی جانب روانہ ہوگئے ہیں۔

اسی بارے میں