فلپائن میں آتشزدگی سے چھ بچوں سمیت 15 افراد ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ EPA
Image caption اطلاعات کے مطابق ہلاک اور زخمی ہونے والوں میں زیادہ تعداد تاجروں کی ہے

فلپائن میں پولیس کے مطابق ایک مارکیٹ میں بھڑک اٹھنے والی آگ سے چھ بچوں سمیت کم از کم 15 افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔

ملک کے جنوبی شہر زمبواگا میں لگنے والی آگ سے کم ازکم 13 افراد زخمی بھی ہوئے ہیں۔

پولیس کے مطابق نیچے لٹکتی ہوئی بجلی کی تاروں کے چھتریاں اور کپڑے لٹکانے والی لوہے کی سلاخوں کے ساتھ ٹکرانے کے باعث آگ بھڑک اٹھی۔

اطلاعات کے مطابق ہلاک اور زخمی ہونے والوں میں زیادہ تعداد تاجروں کی ہے جو چھٹی کے پیش نظر اپنے سٹالز پر ہی سورہے تھے۔

مقامی فائرچیف ڈومنیڈور زبالا نے اخبار انکوائرر کو بتایا کہ آگ اس قدر شدید تھی کہ اس پر قابو پانے کے لیے انتظامیہ کو مجبوراً قریبی علاقوں سے رضاکاروں کی مدد لینا پڑی۔

چیف انسپیکٹر جول ٹوٹوہ نے خبررساں ادارے اے ایف پی کو بتایا کہ رات کے وقت صرف ایک ہے داخلے اور خارجی راستہ کھلا تھا۔ آگ کے بعد لوگ اس میں پھنس گئے اور انھیں باہر نکلنے کا راستہ نہیں ملا۔

جول ٹوٹوہ کے مطابق ہلاک ہونے والے چھ بچوں میں سے دو کی عمر ایک سال تھی۔

خیال رہے کہ فلپائن میں کچی آبادیوں اور بازاروں میں آگ بھڑک اٹھنے کے واقعات اکثر پیش آتے رہتے ہیں۔

گذشہ مئی میں دارالحکومت منیلا میں جوتوں کے ایک کارخانے میں آگ لگنے سے کم از کم 72 افراد ہلاک ہوگئے تھے۔

سنہ 1996 میں منیلا کے ایک ڈانس کلب میں آگ لگنے سے 164 افراد ہلاک اور 94 زخمی ہوئے تھے جو ملکی تاریخ کا آگ سے ہلاکتوں کا سب سے بڑا واقعہ ہے۔

اسی بارے میں