برازیل میں بند ٹوٹنے سے متعدد ہلاکتوں کا خدشہ

Image caption ماریانا میں مقامی حکام کا کہنا ہے کہ جمعرات کو دو پہر بعد اس باندھ میں دراڑیں پڑ گئی تھیں جس کی وجہ سے نیچے کی طرف بہت سا کیچڑ اور بہت سارا ملبہ کھسک گیا

برازیل کے جنوب شمالی ریاست میناز جیرائس میں ایک بند ٹوٹنے سے کم سے کم ایک شخص ہلاک اور درجنوں لا پتہ ہو گئے ہیں جبکہ علاقے میں کافی تباہی کی اطلاعات ہیں۔

اس بند میں لوہے کی ایک کان سے نکلنے والا گندہ پانی جمع ہوتا تھا جس کے پھٹنے سے آس پاس کے علاقے میں سیلاب کی صورت حال پیدا ہوگئی اور قریبی گاؤں کے گھروں میں پانی بھر گیا ہے۔

مقامی حکام نے اس واقعے میں ایک شخص کے ہلاک ہونے کی تصدیق کر دی ہے جبکہ دیگرمزید 16 افراد کے ہلاک ہونے کی اطلاعات ہیں اور متعدد اب بھی لاپتہ بتائے جارہے ہیں۔

قدیم شہر ماریانا میں پہاڑی علاقوں سے یہ کیچڑ نما لال رنگ کا گاڑھا پانی وادی سے تیزی بہتا نیچے پہنچا جس سے آس پاس کے مکانات کو کافی نقصان پہنچا ہے۔ اس کی زد میں بہت سی کاریں اور گاڑیاں بھی آئی ہیں۔

ماریانا میں مقامی حکام کا کہنا ہے کہ جمعرات کو دو پہر بعد اس باندھ میں دراڑیں پڑ گئی تھیں جس کی وجہ سے نیچے کی طرف بہت سا کیچڑ اور بہت سارا ملبہ کھسک گیا۔

برازیل کے شہر ریو ڈی جینیریو میں بی بی سی کی نامہ نگار جولیا ڈیاز کانیریو کا کہنا ہے اس سے جو علاقہ متاثر ہوا ہے وہ تقریبا 500 افراد کا مسکن ہے۔

مشکل یہ ہے کہ لوگوں کو زمین کے تودے گرنے کا خدشہ ہے اس لیے امدادی کام میں رکاوٹیں آرہی ہیں لیکن ہیلی کاپٹر کی مدد سے بہت سے لوگوں کو محفوظ مقامات پر منتقل کی گیا ہے۔

حکام نے لوگوں کو اس بات کے لیے متنبہہ بھی کیا ہے کہ چونکہ یہ پانی لوہے کی کان کنی کے عمل سے متاثر ہوا ہے اس لیے یہ زہریلا بھی ہوسکتا ہے۔

سماریکو مائنگ کپمنی، جو اس باندھ کی مالک ہے، کا کہنا ہے کہ ابھی اس بات کا پتہ نہیں چل پایا ہے کہ آخر باندھ کے پھٹنے کی وجہ کیا ہوسکتی ہے۔

اسی بارے میں