معذور صحافی کا مذاق اڑانے پر ڈونلڈ ٹرمپ پر تنقید

تصویر کے کاپی رائٹ APTN
Image caption مسٹر ٹرمپ نے ایک جلسے کے دوران مسٹر کوالسکی کی بظاہر نقل اڑاتے ہوئے اپنے بازوؤں کو ایک عجیب طریقے سے ہلانا شروع کر دیے

امریکی ریپبلکن پارٹی کی طرف سے صدارتی امیدوار کی دوڑ میں شامل ڈونلڈ ٹرمپ پر اخبار نیویارک ٹائمز کے ایک معذور صحافی کا مذاق اڑانے پر تنقید کی گئی ہے۔

ڈونلڈ ٹرمپ نے ایک جلسے میں صحافی سرگی کوالسکی کی نقل اتاری تھی جو کہ پیدائشی طور پر جوڑوں کی بیماری کا شکار ہیں۔

ڈونلڈ ٹرمپ کو مسلمان میرین کا جواب

اگر آج عراق میں صدام اور لیبیا میں قذافی ہوتے تو بہتر تھا: ڈونلڈ ٹرمپ

ڈونلڈ ٹرمپ نے سرگی کوالسکی کی طرف سے سنہ 2001 میں لکھے گئے ایک مضمون کا حوالہ دیتے ہوئے ان دعووں کا دفاع کیا جن میں کہا گیا تھا کہ 9/11 حملوں کے بعد امریکی ریاست نیو جرسی میں مقیم ’ہزاروں‘ مسلمانوں نے جشن منایا تھا۔

نیو یارک ٹائمز نے ڈونلڈ ٹرمپ کی حرکات کو ’اشتعال انگیز‘ قرار دیا ہے۔

منگل کی رات کو ریاست ساؤتھ کیرولائنا میں ایک جلسے کے دوران ڈونلڈ ٹرمپ نے سنہ 2001 میں اخبار واشنگٹن پوسٹ کی طرف سے شائع کیے گئے ایک مضمون کا حوالہ دیتے ہوئے مسٹر کوالسکی کو ’ایک اچھا صحافی‘ کہا تھا۔

تصویر کے کاپی رائٹ twitter
Image caption ڈونلڈ ٹرمپ کے عملے نے اس موضوع پر کوئی بیان جاری نہیں کیا ہے لیکن انھوں نے اپنے ٹوئٹر اکاؤنٹ سے نیو یارک ٹائمز پر تنقید ظاہر کی ہے

اس کے بعد انھوں نے کہا: ’بیچارے کوالسکی، آپ کو ان کی حرکات دیکھنی ہوں گی۔‘

یہ کہنے کے بعد ٹرمپ نے کوالسکی کی بظاہر نقل اتارتے ہوئے اپنے بازوؤں کو ایک عجیب طریقے سے ہلانا شروع کر دیا۔

انھوں نے کہا: ’آہ، مجھے نہیں پتہ کہ میں نے کیا کہا تھا۔ آہ، مجھے نہیں یاد ہے۔ وہ کہہ رہے تھے کہ انھیں نہیں یاد کہ ’شاید‘ میں نے وہ کہا تھا۔‘

کوالسکی ’آرتھروگرائپوسس‘ بیماری کا شکار ہیں جو جوڑوں کی نقل و حرکت کو متاثر کرتی ہے اور وہ اُن کے دائیں ہاتھ اور دائیں بازوں میں نمایاں ہے۔

نیو یارک ٹائمز کی ایک ترجمان نے اخباری ویب سائٹ ’پولٹیکو‘ کو بتایا: ’ہمیں اس بات پر بہت غصہ ہے کہ انھوں نے ہمارے ایک نامہ نگار کی شخصیت کا مذاق اڑایا ہے۔‘

کوالسکی کی طرف سے سنہ 2001 میں لکھے گئے مضمون کے مطابق جرسی شہر کے حکام نے ’کچھ لوگوں کو اپنی حراست میں لیا تھا جنھیں 11 ستمبر کے حملوں کے بعد مبینہ طور پر جشن مناتے ہوئے دیکھا گیا تھا۔‘

ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے کیے گئے دعوے کہ امریکی مسلمان 11 ستمبر کے حملوں کے بعد جشن منا رہے تھے، مسٹر کوالسکی نے کہا ہے کہ انھوں نے ’کسی کو یہ کہتے ہوئے نہیں سنا تھا کہ وہاں پر ہزاروں یا سینکڑوں لوگ جشن منانے رہے تھے۔‘

جرسی شہر کے میئر نے کہا ہے کہ ڈونلڈ ٹرمپ کے دعوے ’سراسر غلط‘ ہیں۔

اسی بارے میں