زبدانی سے درجنوں شامی باغی جنگجوؤں کا انخلا

تصویر کے کاپی رائٹ EPA
Image caption زبدانی لبنان کی سرحد کے ساتھ باغیوں کا ایک مضبوظ گڑھ سمجھا جاتا ہے

اقوامِ متحدہ کے ایک معاہدے کے تحت لبنان کی سرحد کے قریب واقع گاؤں زبدانی سے درجنوں شامی باغی جنگجو کو نکالا جار ہا ہے۔

بسوں اور ایمبولیسنوں کا ایک قافلہ ان جنگوؤں اور عام شہریوں کو لے کر بیروت جا رہا ہے۔

ہزاروں باغیوں کا دمشق چھوڑنے کا معاہدہ کھٹائی میں

’ایک تہائی شامی باغیوں اور دولتِ اسلامیہ کا نظریہ ایک‘

یہ انخلا حکومتی فورسز کے ہاتھوں محصور زبدانی اور دو دیگر قصبوں کے بارے میں ستمبر میں طے پانے والے ایک معاہدے کے تحت کیا جا رہا ہے۔

ان دیہات میں موجود 300 خاندانوں کو بھی محفوظ راستہ دیا گیا ہے۔

زبدانی حکومت کی حامی فورسز اور لبنانی شیعہ ملیشیا حزب اللہ کے محاصرے میں ہے۔ تاہم شمالی صوبے ادلب کے دو قصبے کفریا اور الفوعۃ سنی باغیوں کے قبضے میں ہیں۔

کفریا اور الفوعۃ سے خاندانوں کو ترکی لے جایا جائے گا جہاں سے وہ لبنان جائیں گے۔

عالمی ادارے ریڈ کراس کا کہنا ہے کہ لبنانی ریڈ کراس، سیریئن عرب ریڈ کریسنٹ اور اقوامِ متحدہ سمیت تمام ادارے اس کارروائی میں شامل ہیں۔

اس سے قبل فلسطینی مہاجرین کے کیمپ یرموک سے دولتِ اسلامیہ کے جنگجوؤں سمیت باغیوں کے انخلا کا ایک منصوبہ سنیچر کو آغاز سے قبل ناکام ہو چکا ہے۔

زبدانی لبنان کی سرحد کے ساتھ باغیوں کا مضبوط گڑھ سمجھا جاتا ہے۔

اسی بارے میں