غلط شخص کو ’پاگل جادوگرنی‘ کا ایس ایم ایس

تصویر کے کاپی رائٹ

اطلاعات کے مطابق آسٹریلیا کے وزیر برائے امیگریشن پیٹر ڈٹن نے ایک صحافی کو موبائل فون پر ’پاگل جادوگرنی‘ کا پیغام غلطی سے بھیجنے پر معافی مانگ لی ہے۔

پولیٹکل نامہ نگار سمینتھا میڈن کا کہنا تھا کہ اس ناخوشگوار پیغام میں کافی سخت الفاظ کا استعمال کیا گیا تھا اور یہ پیغام اصل میں اچھی شہرت نہ رکھنے والے سابق وزیر جیمی بِرگز کے لیے تھا۔

سمینتھا میڈن کا کہنا تھا کہ وزیر ڈٹن نے بِرگز کے استعفے کے بارے میں ان کے لکھے گئے مضمون سے متعلق موبائل پیغام پر معافی مانگ لی ہے۔

اطلاعات کے مطابق امریکی خبر رساں ادارے نیوز کارپ (نیوز کارپوریشن) کو دیے گئے اپنے بیان میں ڈٹن کا کہنا ہے کہ انھیں لگتا ہے کہ سمینتھا میڈن کے اگلے مضمون میں انھیں ’سخت تنقید کا سامنا‘ ہوسکتا ہے۔

ڈٹن کا کہنا تھا کہ ’گدشتہ سالوں میں سیم (سمینتھا) اور میرے درمیان تندوتیز جملوں کا تبادلہ ہوتا رہا ہے اور اسی لیے اس واقعے کو ہم نے اتنا سنجیدہ نہیں لیا اور اس پر ہنسے۔ میں نے صاف لفظوں میں معافی مانگ لی تھی جو انھوں نے نیک نیتی سے قبول کرلی ہے۔‘

سابق وزیر جیمی برگز نے ہانگ کانگ میں ایک رات مبینہ طور پر نازیبا حرکات کرنے کے الزام میں گذشتہ ہفتے استعفیٰ دے دیا تھا۔ ان کے بارے میں شکایت ایک خاتون سرکاری ملازم کی جانب سے سامنے آئی تھی۔