روس میں 50 کلومیٹر سڑک چوری

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption حکام کا اندازہ ہے کہ اس چوری سے قومی خزانے کو 79 ہزار ڈالر کا نقصان ہوا ہے

روس کے حکام نے ملک کے شمالی علاقے کومی کے ایک سینیئر جیل اہلکار کو ہائی وے کی 50 کلومیٹر سڑک چوری کرنے کے الزام میں حراست میں لے لیا ہے۔

پولیس کا کہنا ہے کہ کومی کے جیل خانہ جات کے قائمقام نائب سربراہ ایلیگزینڈر پروٹوپوپوو نے اپنی نگرانی میں اس سڑک کو اکھاڑا۔

سڑک اکھڑوانے کے بعد انھوں نے اس کے سات ہزار کنکریٹ کے سلیب کو بیچ دیا۔

حکام کا اندازہ ہے کہ اس چوری سے قومی خزانے کو 79 ہزار ڈالر کا نقصان ہوا ہے۔

پولیس حکوم نے فرانسیسی خبر رساں ایجنسی اے ایف پی کو بتایا کہ سڑک کو اکھاڑنے کا کام ایک سال سے زیادہ عرصے میں 2014 اور 2015 میں کیا گیا۔

حکام کا کہنا ہے کہ ابتدائی تفتیش میں معلوم چلا ہے کہ یہ کنکریٹ کے سلیب ایک کمرشل کمپنی کو بیچے گئے اور اس کمپنی نے بھی آگے ان سلیب کو منافعے پر بیچا۔

اے ایف پی کے مطابق ایلیگزینڈر کومی میں جیل خانہ جات میں 2010 سے 2015 تک تعینات تھے اور اس عرصے میں ان کو کئی ایوارڈ بھی ملے۔

ایلیگزینڈر کو بدھ کے روز حراست میں لیا گیا اور اگر ان پر الزامات ثابت ہو جاتے ہیں تو ان کو دس سال تک کی قید بھی ہو سکتی ہے۔

کوپی ریپبلک روس کے شمالی علاقے میں ہے اور اس میں زیادہ تر جنگلات ہیں اور یہ علاقہ قدرتی وسائل سے مالا مال ہے جیسے تیل، گیس وغیرہ۔

اے ایف پی کے مطابق روس میں سڑک کی یعمیر کی صنعت میں سب سے زیادہ بدعنوانی ہوتی ہے اور اس کی قیمت دیگر ممالک کے مقابلے میں کہیں زیادہ ہے۔