یروشلم: عیسائی خانقاہ پر نفرت انگیز کلمات تحریر

Image caption اسرائیل میں کٹر قوم پرستوں کی جانب سے عیسائی اور مسلمان دونوں برادریوں کے خلاف نفرت پر مبنی جرائم میں اضافہ دیکھنے میں آیا ہے

پولیس نے کہا ہے کہ یروشلم میں ایک خانقاہ پر عبرانی زبان میں عیسائیوں کے خلاف کلمات تحریر کیے گئے ہیں۔

کیتھولک چرچ کے ایک ترجمان نے کہا کہ جبلِ صہیون پر واقع ڈورمیشن ایبی کی در و دیوار پر ’اسرائیل دشمن کافر عیسائیوں کے لیے موت‘ جیسی دھمکیاں لکھی گئی ہیں۔

یہ پہلا موقع نہیں ہے کہ اس خانقاہ کو نشانہ بنایا گیا ہو۔ 2014 میں اس کا فرنیچر اور صلیبیں نذرِ آتش کر دی گئی تھیں۔

اسرائیل میں کٹر قوم پرستوں کی جانب سے عیسائی اور مسلمان دونوں برادریوں کے خلاف نفرت پر مبنی جرائم میں اضافہ دیکھنے میں آیا ہے۔ یہی نہیں بلکہ خود اسرائیلی انسانی حقوق کے کارکن بھی ان کا نشانہ بنتے رہے ہیں۔

دوسری طرف پوپ فرانسس آج روم میں ایک یہودی سناگوگ کا دورہ کریں گے۔ اس طرح وہ ایسے تیسرے پوپ بن جائیں گے جنھوں روم میں واقع یہودیوں کے اس مرکزی سناگوگ کا دورہ کیا ہے۔

سناگوگ کے ربائی رکارڈو ڈی سیگری نے کہا کہ یہ دورہ نصف صدی میں عیسائیوں اور یہودیوں کے بہتر ہوتے ہوئے تعلقات کا مظہر ہے۔

دسمبر میں پوپ نے کہا تھا کہ رومن کیتھولک چرچ یہودیوں کو عیسائی بنانے کی کوششوں کی حمایت نہیں کرتا۔

اسی بارے میں