’امریکہ کو زیادہ پناہ گزین قبول کرنے چاہییں‘

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption بل گیٹس نے تسلیم کیا کہ سفری قوانین میں نرمی کرنا آسان نہیں ہے

ارب پتی شخصیت بل گیٹس کا کہنا ہے کہ امریکہ کو ’زیادہ سے زیادہ پناہ گزینوں کا خیر مقدم کر کے بہتر مثال قائم کرنی چاہیے۔‘

ڈیوس میں عالمی اقتصادی فورم کے موقعے پر بی بی سی سے بات کرتے ہوئے بل گیٹس کا کہنا تھا کہ ’ان کا ملک بھی اس قابل ہے کہ وہ جرمنی اور سویڈن جیسے ممالک کی پیروی کر سکے جو مبارک باد کے مستحق ہیں۔‘

پناہ گزینوں کا بحران، ’یورپ کے پاس زیادہ وقت نہیں‘

انھوں نے یہ بھی تسلیم کیا کہ ’سفری قوانین میں نرمی کرنا آسان نہیں ہے۔‘

بل گیٹس نے مزید کہا کہ ’حکومتیں مشکل بجٹ کے ساتھ نمٹ رہی ہیں۔‘

تاہم انھوں نے اس بات پر زور دیا ہے کہ ’یہ مسلہ بڑے پیمانے پر سیاسی ہے اور پناہ گزینوں کی تعداد عالمی ریکارڈ نہیں ہے۔‘

دنیا میں سب سے بڑا فلاحی ادارہ چلانے والے بل گیٹس نے کہا کہ بہت سے ممالک میں معاشی ترقی ہونے کی وجہ سے لوگوں کے ہجرت کرنے میں کمی آئے گی۔

انھوں نے ایتھیوپیا کی مثال دی جہاں سے لوگ ہجرت کرتے آ رہے تھے لیکن ’اب وہاں کسی بھی افریقی ملک سے زیادہ پناہ گزین ہیں۔‘

اس تبدیلی کے بارے میں بل گیٹس نے کہا کہ ’ہماری زراعت کے شعبے میں سرمایہ کاری، حکومت کی بہتر پالیسیوں کی وجہ سے خوراک کی پیداوار میں گذشتہ پانچ سالوں میں ڈرامائی طور 50 فیصد اضافہ ہوا۔‘

جنگ زدہ علاقوں سے اپنے گھر چھوڑ کر آنے والوں کے بارے میں انھوں نے کہا کہ ’پناہ گزینوں کے کیمپوں میں ہیضے سے بچاؤ کی ویکسین پہنچانا اولین ترجیح ہونی چاہیے، اور ان کیمپوں میں رہنے والے بچوں کی تعلیم دوبارہ شروع کروانے کے لیے مدد درکار ہے۔‘

اسی بارے میں