دس چیزیں جن سے ہم لاعلم تھے

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption سا‏ئنس دانوں کا خیال ہے کہ ان کی رفتار بہت سست ہوتی تھی

1۔ ڈائنوسار کی ایک دیوقامت نسل ٹرائنا سارس ریکس کو شاید آپ دوڑ میں شکست دے سکتے تھے۔

مزید جاننے کے لیے کلک کریں (سائنس)

2۔ ٹنڈر ایپ حاصل کرنے کا سب سے مناسب وقت رات نو بجے ہے۔

مزید جاننے کے لیے کلک کریں (ہفنگٹن پوسٹ)

3۔ سٹالین نے ماؤ کے فضلے کی جانچ کرائی تھی۔

مزید جاننے کے لیے کلک کریں

4۔ ڈونالڈ ٹرمپ کی ریلی سے قبل جو 50 منٹ تک موسیقی بجائی جاتی ہے وہ ایک مخصوص فہرست سے تعلق رکھتی ہے جسے امیدوار نے خود ہی جمع کیا ہے۔

مزید جاننے کے لیے کلک کریں (دا نیویارکر)

5۔ امریکہ میں اب رائے عامہ جاننے والوں کو ایک انٹرویو کے لیے 30 سے 35 فون کالز کرنے پڑتے ہیں۔

مزید جاننے کے لیے کلک کریں (فینانشیئل ٹائمز)
تصویر کے کاپی رائٹ
Image caption خاتون کے نام پر مبنی فلم ڈزنی نے بنائي ہے

6۔ جن کے علاقے میں پب یعنی شراب خانے ہیں وہ اپنے علاقے کو نسبتا خوشحال کہتے ہیں۔

مزید جاننے کے لیے کلک کریں (میٹرو)

7۔ خلا میں مچھلی تیرنا بند کر دیتی ہے۔

مزید جاننے کے لیے کلک کریں (ناسا)

8۔ ڈزنی فلم پوکاہونٹاز گرچہ خاتون کے نام پر ہے لیکن اس میں تقریبا 76 فی صد لائنیں مرد کردار بولتے ہیں جبکہ مولن میں یہ 77 فی صد اور دا لٹل مرمیڈ میں 68 فی صد ہے۔

مزید جاننے کے لیے کلک کریں (انڈیپنڈینٹ)

9۔ بی بی سی فور کے لانگ ویو پر سوئٹچنگ اکانومی 7 کے بجلی میٹر کے سنگنل کی معلومات فراہم کی گئی تھی۔

مزید جاننے کے لیے کلک کریں

10۔ لندن کے سابق میئر کیون لیونگسٹون نے پنیر اس لیے خریدنا بند کر دیا کہ وہ ڈی کمپوز یعنی تحلیل نہیں ہوتی۔

مزید جاننے کے لیے کلک کریں (سنڈے ٹائمز)

اسی بارے میں