ّڈبلن میں ہوٹل میں فائرنگ، ایک ہلاک، دو زخمی

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption پولیس نے اس واقعے کے بعد ہوٹل کو فورینزک معائنے کے لیے بند کر دیا گیا ہے

جمہوریہ آئرلینڈ میں ورلڈ باکسنگ آرگنائزیشن کے مقابلوں میں شرکت کے حوالے سے ایک تقریب کے دوران فائرنگ کے واقعے میں ایک شخص کی ہلاکت ہوئی ہے۔

جمعے کو ڈبلن کے ریگنسی ہوٹل میں مقامی وقت کے مطابق دو بج کر 30 منٹ پر ہونے والے فائرنگ کے واقعے میں دو افراد زخمی بھی ہوئے ہیں۔

اطلاعات کے مطابق حملہ آور پولیس کی وردی میں ملبوس تھے اور انھوں نے اے کے 47 رائیفلز سے فائرنگ کی۔

یہ تقریب سنیچر کو جیمی کاوناگ اور انتونیو جائو بینٹو کے درمیان ہونے والے یورپین لائٹ ویٹ مقابلے کے سلسلے میں منعقد کی گئی تھی۔

جیمی کاوناگ نے سماجی رابطے کے ویب سائٹ ٹوئٹر پر پیغام دیا کہ وہ ٹھیک ہیں اور وہ بس یہی کہنا چاہیں گے کہ آج کا دن خوش قسمت تھا۔

بی بی سی ریڈیو فوئل کے سپورٹس نامہ نگار کیون میک انینا جو اس وقت وہاں موجود تھے ان کا کہنا تھا کہ جب ایک حملہ آور نے ان پر بندوق تانی تو انھوں نے اس سے پہلے کبھی اتنا خوف محسوس نہیں کیا۔

انھوں نے بتایا کہ انھوں نے ایک حملہ آور کو ’تقریباً چھ فٹ کے فاصلے پر‘ ایک شخص کی ٹانگ پر گولی مارتے دیکھا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ زخمی ہونے والے افراد کی عمریں 20 اور30 سال کے قریب ہیں اور ’ممکنہ طور پر انھیں گولیاں لگی ہیں۔‘

زخمیوں کو ڈبلن کے ہسپتال منتقل کر دیا گیا ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption اطلاعات کے مطابق حملہ آور پولیس کی وردی میں ملبوس تھے اور انھوں نے اے کے 47 رائیفلز سے فائرنگ کی

پولیس اس واقعے میں مشتبہ جرائم پیشہ افراد کے ملوث ہونے کے بارے میں تفتیش کر رہی ہے اور ہوٹل کو فورینزک معائنے کے لیے بند کر دیا گیا ہے۔

باکسنگ یونین آف آئرلینڈ کے صدر کا کہنا ہے کہ فائرنگ میں باکسروں یا دیگر افراد کے درمیان تفریق نہیں کی گئی تھی۔

آئرلینڈ کے سرکاری نشریاتی ادارے آر ٹی ای سے بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ لوگ اپنے تحفظ کے لیے چھپ رہے تھے اور ’انھیں یقین نہیں آرہا تھا کہ کیا ہو رہا ہے۔‘

ان کا کہنا تھا کہ تقریب میں بچوں سمیت 200 سے 300 افراد موجود تھے۔

سنیچر کو کلیش آف کلین کے سلسلے میں ڈبلن کے نیشنل سٹیڈیم میں ہونے والے کے بارے میں بھی بتایا جارہا ہے کہ اب یہ منسوخ کر دیا گیا ہے۔