پگڑی نہ اتارنے پر سکھ مسافر طیارے سے ’آف لوڈ‘

تصویر کے کاپی رائٹ Waris Ahluwalia Instagram

ایک سکھ اداکار کا کہنا ہے کہ اسے اس کی پگڑی کی وجہ سے ہوائی جہاز پر سوار ہونے سے روک دیا گیا۔

بھارتی نژاد امریکی ڈیزائنر وارث اہلو والیا کا کہنا ہے کہ انھیں ایرو میکسیکو کے جہاز پر سوار ہونے سے اس وقت روک دیاگیا جب انھوں نے اپنی پگڑی اتارنے سے انکار کیا۔

یہ واقعہ اس وقت پیش آیا جب میکسیکو سے نیو یارک جانے والے پرواز کے دوران سکیورٹی کے اضافی اقدامات کیے گئے۔

ایرو میکسیکو کا کہنا ہے کہ یہ سکیورٹی اقدامات تھے اور اگر اس سے کسی کو پریشانی ہوئی ہے تو انھیں افسوس ہے۔

اہلو والیا نے انسٹاگرام پر اپنی تصاویر ڈالیں اور ان کے ٹکٹ پر ’SSSS‘ کی مہر لگی تھی جس کا مطلب ہے کہ انھیں دوبارہ سکیورٹی چیکنگ کے لیے جانا ہوگا۔ اس مقصد کے لیے مسافروں کا انتخاب مخصوص پیمانے پر نہیں ہوتا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Waris Ahluwalia Instagram

انھوں نے نیویارک ڈیلی نیوز کو بتایا کہ اضافی چیکنگ کے لیے جب عملے نے انھیں پگڑی اتارنے کے لیے کہا تو انھوں نے ایسا کرنے سے انکار کر دیا۔

ان کے بقول ’یہ ایسا کام ہے جو وہ سب کے سامنے نہیں کر سکتے۔ یہ ان کے لیے ایسا ہی ہے جیسے انھیں سب کے سامنے کپڑے اتارنے کے لیے کہا جائے۔‘ انھوں نے عملے سے کہا کہ وہ علیحدہ کمرے میں جا کر ایسا کرنے کو تیار ہیں لیکن انھیں کہا گیا کہ وہ اس جہاز پر سفر نہیں کریں گے وہ دوسرا ٹکٹ کروا لیں۔

وارث اہلو والیا کا کہنا تھا کہ ’یہ بالکل مناسب نہیں ہے کہ آپ کسی سے کہہ دیں کے آپ اس جہاز پر سفر نہیں کر سکتے۔ کیونکہ آپ نے کچھ ایسا پہنا ہوا ہے یا آپ کے مذہبی عقائد ہیں۔‘

تصویر کے کاپی رائٹ Waris Ahluwalia Instagram

تاہم ائیر لاین کا ایک بیان میں کہنا ہے کہ امریکی حکام کی ہدایت کے مطابق یہ سخت سکیورٹی اقدامات کیے گئے ہیں۔ تاہم مسافر سے جلد از جلد منزل پر پہنچنے کے لیے متبادل راستے اختیار کرنے کو کہہ دیا گیا تھا۔

اسی بارے میں