عراق: جنازے میں خود کش دھماکہ، 38 افراد ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters

عراق میں حکام کے مطابق ملک کے شمال مشرقی حصے ایک جنازے میں ہونے والے خود کش بم دھماکے میں کم سے کم 38 افراد ہلاک ہو گئے ہیں۔

حکام کا کہنا ہے کہ یہ دھماکہ دارالحکومت بغداد کے شمال میں اس وقت ہوا جب لوگ قبرستان میں تدفین کے لیے جمع تھے۔

حکام کے مطابق ہلاک ہونے والوں میں اہم شیعہ رہنما شامل ہیں۔

خود کو دولتِ اسلامیہ کہلانے والی شدت پسند تنظیم نے اس حملے کی ذمہ داری قبول کی ہے۔

خبر رساں ادارے روئٹرز نے سکیورٹی اہلکاروں کے حوالے سے بتایا کہ پیر کو ہونے والے خود کش حملے میں دو شیعہ کمانڈروں کو اس وقت نشانہ بنایا گیا جب وہ ایک جنازے میں شریک تھے۔

اہلکاروں کے مطابق خود کش حملہ آور شیعہ کمانڈروں کی جانب بڑھا اور اس نے بارود سے بھری واسکٹ کو دھماکے سے اڑا دیا۔

عراق میں شیعہ مسلک سے تعلق رکھنے والے افراد اکثر سنی تشدد پسندوں کے ہاتھوں نشانہ بنتے رہتے ہیں۔

اسی بارے میں