ڈونلڈ ٹرمپ پر ساتھی امیدواروں کی سخت تنقید

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption ڈونلڈ ٹرمپ اپنے حریف ماکو روبیو اور ٹیڈ کروز کی شدید نکتہ چینی کے سبب دفاعی موڈ میں تھے جنہوں نے ٹرمپ کی بعض خامیوں اور کمزریوں کو اجا گر کیا

امریکہ میں صدارتی انتخابات کے لیے امیداور کی دوڑ میں شامل ریپبلکن پارٹی کے امیدواروں نے ایک ٹی وی مباحثے کے دوران اس دوڑ میں سبقت حاصل کرنے والے ڈونلڈ ٹرمپ پر شدید نکتہ چینی کی ہے۔

ایک روز پہلے ہی ریپبلکن پارٹی کے بعض سرکردہ رہنماؤں نے ووٹرز سے ڈونلڈ ٹرمپ کی حمایت نہ کرنے کی اپیل کی تھی۔

ڈیٹرائٹ میں ڈونلڈ ٹرمپ اپنے حریف ماکو روبیو اور ٹیڈ کروز کی شدید نکتہ چینی کے سبب دفاعی موڈ میں تھے جنھوں نے ٹرمپ کی بعض خامیوں اور کمزریوں کو اجاگر کیا۔

اس بحث کا اہتمام فوکس نیوز نے کیا تھا جس کے دوران ٹرمپ نے اپنے ساتھی امیدوار، فلوریڈا سے سینیٹر مارکو ربیو کے لیے ’چھوٹے روبیو‘ جبکہ ٹیڈ کروز کے لیے ’جھوٹے کروز‘ جیسے بعض نازیبا الفاظ کا بھی استعمال کیا۔

فلوریڈا کے سینیٹر نے کہا کہ ’وہ قدامت پسند تحریک کو ایسے شخص کو سونپنے کے ہرگز قائل نہیں ہیں جس کے خیال میں خفیہ جوہری گروپ 1980 کے عشرے کا کوئی راک بینڈ ہے۔‘

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption ریپبلکن پارٹی کے بعض سرکردہ رہنماؤں نے ووٹرز سے ڈونلڈ ٹرمپ کی حمایت نا کرنے کی اپیل کی تھی

تاہم ان کے حریفوں نے یہ ضرور کہا کہ اگر وہ نامزدگی کی دوڑ جیت گئے تو وہ ان کی حمایت کریں گے۔

فوکس نیوز نے جب مسٹر ٹرمپ کو شام کے پناہ گزینوں، افغانستان میں جنگ اور سابق صدر جارج بش کے متعلق بار بار اپنے موقف کے میں تبدیلی لانے کے لیے چیلنج کیا تو انہوں نے اس کا بھی دفاع کیا۔

انہو نے نے کہا ’میں اندر سے بہت مضبوط ہوں۔ لیکن میں نے تو کسی بھی ایسے کامیاب شخص کو نہیں دیکھا جو حالات کے مطابق نہ بدل جاتا ہو، کس کے پاس تھوڑی سی لچک نہیں ہوتی ہے۔‘

اس بحث کی ابتدا میں فوکس نیوز نے ان سے 2012 میں صدارتی انتخابات لڑنے والے مٹ رومنی کے ان بیانات کے متعلق پوچھا جس میں انہوں ٹرمپ پر شدید تنقید کی تھی۔

اس پر جانب ڈونلڈ ٹرمپ نے مٹ رومنی کا مذاق اڑاتے ہوئے انھیں ایک ’ناکام امیدوار‘ اور ’چوک آرٹسٹ‘ قرار دیا۔ اور کہا کہ ’مٹ رومنی نے سنہ 2012 میں بد ترین مہم چلائی، انھیں براک اوباما کو شکست دینی چاہیے تھی۔‘

تصویر کے کاپی رائٹ EPA
Image caption مٹ رومنی نے صدارتی امیدوار کی دوڑ میں شامل ڈونلڈ ٹرمپ پر سخت تنقید کرتے ہوئے کہا تھا کہ کہ ٹرمپ کے پاس صدر بننے والا نہ مزاج ہے اور نہ ہی فیصلے کی قوت ہے

ریپبلکن پارٹی کے رہنما مٹ رومنی نے صدارتی امیدوار کی دوڑ میں شامل ڈونلڈ ٹرمپ پر سخت تنقید کرتے ہوئے کہا تھا کہ کہ ٹرمپ کے پاس صدر بننے والا نہ مزاج ہے اور نہ ہی فیصلے کی قوت ہے۔

مٹ رومنی نے جمعرات کو ایک تقریر کے دوران ڈونلڈ ٹرمپ پر ضدی، عورت بیزار اور بد دیانت ہونے کا الزام عائد کیا تھا۔ ان کا مزید کہنا تھا ’اگر ٹرمپ ریپبلکن پارٹی کےصدارتی امید وار بن گئے تو امریکہ کے محفوظ اور خوشحال مستقبل بننے کے امکانات ختم ہو جائیں گے۔‘

ادھر ریپبلکن پارٹی کے سینئیر رہنماؤں نے ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے صدارتی امیدوار کی نامزدگی حاصل کرنے پر اپنے خدشات کا اظہار کیا ہے۔

اسی بارے میں