’اسرائیلی فوجی کی فائرنگ سے زخمی فلسطینی حملہ آور ہلاک‘

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption حکام کا کہنا ہے کہ گولی لگنے کے بعد فلسطینی شہری فوری طور پر ہلاک ہو گیا تھا

اسرائیلی فوجی کی جانب سے فلسطینی شہری کے سر میں گولی مارنے کی ویڈیو منظرِ عام پر آنے کے بعد اسرائیلی فوج کو حراست میں لیا گیا ہے۔

ہلاک ہونے والا فلسطینی شہری اُن دو حملہ آورں میں شامل ہے جنھوں نے غربِ اردن میں چیک پوسٹ پر کھڑے ایک اسرائیلی فوجی پر چاقو سے وار کیا تھا۔

حکام کا کہنا ہے کہ گولی لگنے کے بعد فلسطینی شہری فوری طور پر ہلاک ہو گیا تھا۔

جمعرات کو اسرائیل کی فوج کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ اس طرح سے گولی مارنا اسرائیل ڈیفنس فورس کی قدروں کے خلاف ہے۔

گولی مارنے والے فوجی کی شناخت ظاہر نہیں کی گئی ہے۔

فوج کے بیان میں کہا گیا ہے کہ ’اس واقعے کی ابتدائی تحقیقات کے بعد ملٹری پولیس نے تحقیقات شروع کر دی ہیں۔‘

فلسطینی شہری کو گولی مارنے کا واقعہ اُس وقت پیش آیا جب چوکی کے قریب دو فلسطینی شہریوں نے اسرائیلی فوجی پر حملہ کیا۔

ویڈیو میں نظر آنے والے فلسطینی شہری حملے کے دوران زخمی ہو گیا تھا۔ ویڈیو میں یہ دیکھا جا سکتا ہے کہ ایک اسرائیلی فوجی نے فلسطینی شہری کے سر میں گولی ماری۔

یاد رہے کہ گذشتہ سال اکتوبر سے فلسطینی شہریوں کی جانب سے اسرائیلی فوجیوں پر چاقو سے حملے، فائرنگ اور گاڑیاں چڑھانے کے واقعات میں کم سے کم 29 اسرائیلی فوجی ہلاک ہوئے ہیں۔ جبکہ اس دوران 180 فلسطینی شہری مارے گئے ہیں۔

اسرائیلی کا کہنا ہے کہ ہلاک ہونے والے زیادہ تر فلسطینی شہری وہ ہیں جنھوں نے فوجیوں پر حملہ کرنے کی کوشش کی۔

اسی بارے میں