پیرس میں فرسٹ ایڈ کی تربیت

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption 12 سال سے زیادہ عمر کے بچوں کو اس تربیت میں حصہ لینے کی اجازت تھی

خبر رساں ادارے ایسوسی ایٹڈ پریس کے مطابق فرانس کے دارالحکومت پیرس میں 3200 افراد نے فرسٹ ایڈ یعنی ابتدائی طبی امداد کی تربیت لی ہے تاکہ کسی بھی حملے کے نتیجے میں بہتر انداز میں نمٹا جا سکے۔

اے پی کے مطابق دو گھنٹوں پر مشتمل اس تربیتی سیشن کا انعقاد پیرس کے ہر ضلعے میں کیا گیا۔ شرکا کو بتایا گیا کہ ہنگامی صورتحال میں انھوں کس قسم کے ردعمل کا مظاہرہ کرنا ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption بتایا گیا ہے کہ شہریوں کی جانب سے حالیہ عرصے میں فرسٹ ایڈ کی تربیت فراہم کرنے کے مطالبے میں اضافہ دیکھنے میں آیا تھا

حکام نے اس تربیت کو سال میں ایک بار دہرانے کا منصوبہ بنایا ہے۔

فرانسیسی دارالحکومت میں گذشتہ نومبر کو ہونے والے حملوں میں 130 افراد ہلاک ہوئے تھے جس کے بعد سٹی کونسل نے اس تربیتی کورس کے انعقاد کی منظوری دی تھی۔

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption یہ تربیتی پروگرام پیرس کے ہر ضلعے میں منعقفد کروایا گیا

اے پی کے مطابق دارلحکومت میں موجود فائر فائٹرز اور فرانسیسی ریڈ کراس نے اس بات کو نوٹ کیا کہ فرسٹ ایڈ یعنی ابتدائی طبی امداد کے تربیتی پروگرام کے لیے کیے جانے والا مطالبہ بڑھتا جا رہا تھا۔