دس چیزیں جن سے ہم گذشتہ ہفتے لا علم تھے

تصویر کے کاپی رائٹ Alamy
Image caption رولر کوسٹرز کی سواری بڑے شہروں میں نوجوانوں کو لبھاتی ہے

1۔ بعض رولر کوسٹر پر آپ کو چیخنے کی اجازت نہیں۔

مزید معلومات کے لیے کلک کریں

2۔ لندن کی ہوا خریدنے کے لیے آپ کے تقریبا 20 پاؤنڈ لگ سکتے ہیں۔

مزید معلومات کے لیے کلک کریں (ایوننگ سٹینڈرڈ)

3۔ صدر براک اوباما کا مشورہ ہے کہ جب آپ کسی پارٹی کے لیے ڈی جے چلائیں تو اریتھا فرینکلن کے ’راکی سٹیڈی‘ سے شروع کریں۔

مزید معلومات کے لیے کلک کریں (نیو یارکر)

4۔ گرامر یا قوا‏عد پر زور دینے والے زیادہ تر ’انٹروورٹ‘ یا کم اظہار کرنے والے ہوتے ہیں۔

مزید معلومات کے لیے کلک کریں (دی گارڈین)

5۔ سنہ 1978 کی ’U‘ درجہ بندی والی فلم کو یکم اپریل کو ’PG‘ درجے میں ڈال دیا گیا۔

مزید معلومات کے لیے کلک کریں
تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption سائنسی آلات سے لیس کیڑے ڈرونز کے متبادل ہو سکتے ہیں

6۔ جرم کے لیے لندن کی زیر زمین سنٹرل لائن سب سے خراب ہے۔

مزید معلومات کے لیے کلک کریں (گزموڈو)

7۔ کسی زمانے میں انسان شاید سائبیریا کے ایک سینگ والے جانور کے ساتھ رہتے تھے۔

مزید معلومات کے لیے کلک کریں (ہسٹری چینل)

8۔ جب کرافٹ نے اپنے میکرونی اور پنیر بنانے کے طریقے میں تبدیلی کی تو کسی کا دھیان اس جانب نہیں گیا۔

مزید معلومات کے لیے کلک کریں (واشنگٹن پوسٹ)

9۔ میشیگن میں ایک خاتون نے ’ڈاکٹر پیپر‘ نام کے ٹوئٹر ہینڈل کو 41 ہزار پانی کے بوتل کے بدلے فروخت کیا۔

مزید معلومات کے لیے کلک کریں (اے بی سی نیوز)

10۔ برقی آلات سے لیس بڑے بھونروں کی فوج ڈرونز کی متبادل ہو سکتی ہیں۔

مزید معلومات کے لیے کلک کریں (دا ٹیلی گراف)

اسی بارے میں