دس چیزیں جن سے ہم گذشتہ ہفتے تک لاعلم تھے

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption رونے اور دریا بہانے کی باتیں اردو شاعری میں نظر آتی ہیں

1۔ چھوٹے انسان جنھیں ’بوروورز‘ میں پیش کیا گيا ہے وہ تقریباً اندھے اور بہرے ہوں گے اور انھیں انتہائی موٹے کپڑوں کی ضرورت ہوگي۔

مزید معلومات کے لیے کلک کریں (دا ڈیلی ٹیلیگراف)

2۔ چوہے نما جانور ہیمسٹر جسے ’میرون‘ کہا جاتا ہے اس کا تعلق شاہی گھرانے سے ہے۔

مزید معلومات کے لیے کلک کریں

3۔ ماما ویسٹ رے کے آرکیڈین جزیرے کا وجود نہیں تاہم وہاں کی سیاحت کے لیے ایک پیشہ ورانہ بروشر ہے۔

مزید معلومات کے لیے کلک کریں

4۔ لیبریڈر کتے شاید فطری طور پر ضرورت سے زیادہ کھانے کے لیے بنے ہیں۔

مزید معلومات کے لیے کلک کریں

5۔ لندن میں صحت کے لیے سائیکل چلانا بہترین طریقہ ہے لیکن دہلی، دوحہ یا کراچی میں ایسا نہیں ہے۔

مزید معلومات کے لیے کلک کریں (نیو سائنٹسٹ)
تصویر کے کاپی رائٹ .
Image caption لیبریڈر شاید زیادہ کھانے کے لیے ہی بنا ہے

6۔ غیر قانونی طور پر فلم ڈاؤن لوڈ کرنا سپین کے بشپ کے لیے گناہ کے مترادف ہے۔

مزید معلومات کے لیے کلک کریں (دا لوکل)

7۔ طیاروں کے فرسٹ کلاس مسافروں کو زیادہ غصہ آتا ہے۔

مزید معلومات کے لیے کلک کریں (گزموڈو)

8۔ دنیا میں اتنے لوگ نہیں ہیں جو رو رو کر دریا بہا دیں لیکن ہاں اگر سب 55 آنسو کے قطرے بہائيں تو ایک اولمپک سائز کا سوئمنگ پول بھر سکتا ہے۔

مزید معلومات کے لیے کلک کریں (یونیورسٹی آف لیسسٹر)

9۔ گھڑیالوں (مگر مچھ) کی آنکھیں گھات لگانے کے لیے بہت موزوں ہوتی ہیں۔

مزید معلومات کے لیے کلک کریں

10۔ امریکہ میں دو ڈالر کے نوٹ قانونی ٹینڈر ہیں لیکن سب اس بات کو نہیں جانتے۔

مزید معلومات کے لیے کلک کریں (بوئنگ بوئنگ)

اسی بارے میں