مالی میں اقوام متحدہ کی امن فوج پر حملہ، پانچ فوجی ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ .
Image caption مالی کے شمالی اور وسطی علاقوں میں اقوام متحدہ کے امن قائم کرنے والے فوجیوں پر گاہے بگاہے حملے ہوتے رہتے ہیں

افریقی ملک مالی کے وسطی علاقے میں ہونے والے ایک حملے میں اقوام متحدہ کے امن قائم کرنے والے پانچ فوجی ہلاک ہو گئے ہیں جبکہ ایک فوجی زخمی ہوا ہے۔

ہلاک ہونے والے فوجیوں کا ٹوگو سے تعلق تھا اور یہ اپنی گاڑی میں موپٹی علاقے میں سفر کر رہے تھے جہاں بارودی سرنگ سے ٹکڑانے سے قبل ان پر فائرنگ کی گئي تھی۔

٭ مالی میں اقوام متحدہ کے مشن پر راکٹ حملہ، دو اہلکار ہلاک

یہ علاقہ میسینا لبریشن فرنٹ کے مضبوط گڑھ کے طور پر معروف ہے اور اس تنظیم کا تعلق القاعدہ سے بتایا جاتا ہے۔

اسلام پسندوں اور طوراق جنگجوؤں کی جانب سے بغاوت کے بعد مالی میں استحکام کے لیے اقوام متحدہ کا مشن سنہ 2013 میں قائم کیا گیا تھا۔

ملک کے شمالی اور وسطی علاقوں میں اقوام متحدہ کے امن قائم کرنے والے فوجیوں پر اکثر حملے ہوتے رہتے ہیں۔

ابھی تک کسی بھی گروہ نے اس حملے کی ذمہ داری قبول نہیں کی ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption گذشتہ سال نومبر میں اقوام متحدہ کے مشن پر ہونے والے حملے میں دو فوجی ہلاک ہوئے تھے

یہ حملہ سیوارے شہر کے قریب اقوام متحدہ کے پیس کیپرز کے بین الاقوامی دن کے موقعے پر ہوا۔ گذشتہ سال 16 ممالک میں اقوام متحدہ کے امن بحال کرنے والے 120 فوجی امن بحال کرنے کی کارروائیوں میں ہلاک ہوئے ہیں۔

مالی کی سابق سامراجی قوت فرانس نے جنوری سنہ 2013 میں ملک میں اس وقت مداخلت کی تھی جب باغیوں نے شمالی علاقوں کو قبضے میں لے لیا تھا اور دارالحکومت بماکو کے لیے خطرہ پیدا ہو گیا تھا۔

اسی سال جولائی میں اقوام متحدہ کی فوج نے شمالی شہروں کی بازیابی کے بعد سکیورٹی کی ذمہ داری اپنے ہاتھوں میں لے لی تھی۔

اسی بارے میں