شائقین میں جھڑپیں: یوئیفا کا روس کے خلاف تحقیقات کا اعلان

تصویر کے کاپی رائٹ PA
Image caption فرانسیسی پولیس کا کہنا ہے کہ ان جھڑپوں کے نتیجے میں ایک برطانوی شہری شدید زخمی ہوا ہے

یورپی ممالک کی فٹبال کی نگران تنظیم یوئیفا نے انگلینڈ اور روس کے مابین کھیلے جانے والے میچ میں شائقین کے درمیان ہونے والی جھڑپوں کے بعد روس کی فٹبال ایسوسی ایشن کے خلاف تحقیقات کا آغاز کر دیا ہے۔

’رشین فٹبال ایسوسی ایشن‘ نے اس بات کی تصدیق کی ہے کہ روس پر لگائے جانے والے الزامات میں شائقین کی جانب سے دھکم پیل، نسل پر ستانہ رویہ اور گراؤنڈ میں آتشبازی کے الزام شامل ہیں۔

روس کے لیے سزا کا تعین منگل کو ہونے والے اجلاس میں کیا جائے گا۔

دوسری جانب یورپی فٹبال کے ادارے یوئیفا کا کہنا ہے کہ اس سلسلے میں انگلینڈ کی فٹبال ایسوسی ایشن کے خلاف کوئی کارروائی عمل میں نہیں لائی جا رہی ہے۔

خیال رہے کہ گذشتہ روز فرانس کے شہر مارسے میں انگلینڈ اور روس کے فٹبال شائقین اور پولیس کے درمیان تازہ جھڑپیں ہوئی تھیں۔

انگلینڈ اور روس کے درمیان یورو 2016 کے گروپ بی کا میچ ایک، ایک گول سے برابر رہا تھا اور اس دوران سٹیڈیم میں شائقین کے درمیان جھڑپیں دیکھی گئیں جن میں بظاہر روسی حامیوں کو انگلینڈ کے شائقین پر جھپٹتے دیکھا جا سکتا تھا۔

میچ کے بعد یورپی فٹبال کے ادارے یوئیفا کی جانب سے جاری کیے گئے بیان میں کہا گیا تھا کہ ’ہم مارسے میں ہونے والے اس حادثے کی مذمت کرتے ہیں اور جو لوگ بھی ان پرتشدد واقعات میں ملوث ہیں ان کی فٹبال میں کوئی جگہ نہیں ہے۔‘

ادھر فرانسیسی پولیس کا کہنا ہے کہ ان جھڑپوں کے نتیجے میں ایک برطانوی شہری شدید زخمی ہوا ہے۔

اسی بارے میں